15

پی ایس ایل 7 نے پی سی بی کو مالامال کردیا

پاکستان سپرلیگ کے اخراجات اگلے ہفتے فرنچائزز کو بھجوا دئیے جائیں گے،کوویڈ مسائل کی وجہ سے 5ویں اور چھٹے ایڈیشن کے اخراجات بنانے میں تاخیر ہوئی۔

پاکستان کرکٹ بورڈ ذرائع کے مطابق پی ایس ایل 7 سے کرکٹ بورڈ کو مجموعی طور پر تقریبا 2 ارب روپے سے زائدکا مالی فائدہ ہوا ہے۔ کرونا کی وجہ سے پانچویں اور چھٹے ایڈیشن میں ٹیموں کو مراعات کی مد میں تقریبا ایک ارب روپے کے اخراجات برادشت کرنا پڑے۔

یہ بھی بتایا گیا کہ اس وقت پی سی بی کے پاس 15 بلین روپے کے ریزروز موجود ہیں اوراس سے قبل مالی سال میں 12 ارب روپے تھے۔

اس کےعلاوہ کرکٹ بورڈ میں سینٹرل کنٹریکٹ کے حوالے سے اس ہفتے تک متعدد میٹنگز ہوئی ہیں۔ ریڈ بال اور وائٹ بال  فارمیٹ کے لحاظ کنٹریکٹ دینے کی تجویز دی گئی ہے۔

کھلاڑیوں کو 2 فارمیٹ کے لحاظ سے کنٹریکٹ دینے کی بات ہو رہی ہے۔ایمرجنگ کیٹیگری میں کھلاڑیوں کی تعداد بڑھانے کی تجویز ہے اورابھی ایمرجنگ میں 3 کھلاڑی شامل ہیں۔

آئیکونک کھلاڑیوں کے لئے فنڈز بنانے کی تجویز ہے تا کہ فنڈز سے انہیں رقم دی جائیں گی تاہم وہ کم سے کم لیگزکھیلیں۔کرکٹرز کے معاوضے دنیا کے مقابلے میں کم ہیں اس گیپ کو کم کرنا ہے۔ نئے کنٹریکٹس میں کھلاڑیوں کے معاوضوں میں لازمی اضافہ کیا جائے گا۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں