12

کشیدہ صورتحال، پاکستان ٹیم کا دورۂ سری لنکا مشکلات کا شکار

پاک سری لنکا ٹیسٹ سیریز کیلئے پی سی بی نے سری لنکا میں جاری کشیدہ صورتحال پر نظر رکھنا شروع کردی۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ صورتحال زیادہ سنگین ہوئی تو سری لنکن بورڈ اور حکومت کی مشاورت سے فیصلہ کریں گے۔

سری لنکا میں معاشی بحران کے باعث سیاسی صورتحال انتہائی کشیدہ ہے، وزیراعظم مہندرا راجاپکسے نے عوام کی جانب سے پرتشدد مظاہروں کے باعث اپنے عہدے سے استعفیٰ دیدیا ہے۔

عوام مہنگائی، بجلی اور پیٹرول کی قلت کے باعث کولمبو سمیت کئی شہروں میں احتجاج کررہے ہیں، پرتشدد مظاہروں کے دوران کئی شہری ہلاک اور زخمی بھی ہوچکے ہیں۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے سری لنکا میں پرتشدد مظاہروں کے باعث پیدا ہونیوالی کشیدہ صورتحال پر نظر رکھنا شروع کردی ہے۔ پی سی بی کا کہنا ہے کہ ٹیسٹ سیریز 5 جولائی سے  9اگست کی ونڈو میں شیڈول میں ہونی ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ پی سی بی کے سری لنکا سے درینہ تعلقات ہیں، مشکل حالات میں بھی نا صرف بورڈ بلکہ حکومت نے سری لنکا کے ساتھ دیا ہے، ہم نے ہمیشہ سری لنکا میں کرکٹ کھیلنے کو ترجیح دی ہے، ہم سری لنکا کو آسٹریلیا کی نگاہ سے نہیں دیکھتے، پاکستان نے سری لنکا کا دورہ اس وقت بھی کیا جب وہاں چرچ میں دہشت گردی کا واقعہ ہوا تھا۔

پی سی بی نے اپنے بیان میں یہ بھی کہا ہے کہ سری لنکا نے بھی مشکل وقت میں پاکستان کا ساتھ دیا ہے، دورۂ سری لنکا شیڈول کے مطابق مقررہ ونڈو میں ہی ہونے کی اُمید ہے، صورتحال زیادہ سنگین ہوئی تو سری لنکن بورڈ اور حکومت کی مشاورت سے فیصلہ کریں گے۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں