isb 35

بہارہ کہو ریونیو آفس کے باہر دفح 144 کی دھجیاں بکھیر دی گٸ

بہارہ کہو ریونیو آفس کے باہر دفح 144 کی دھجیاں بکھیر دی گٸ نام نہاد رجسٹریشن کے نام پر لوگوں کا ایک بڑا مجمع اکھٹا کیا گیا نہ کوٸ حفاظتی تدابیر پر عمل کیا گیا نہ ہی کوئی سیکورٹی اہل کار نظر آیا لوگوں کو 12000 ملنے کے امکانات تو بہت کم ہیں لیکن اس طرہ کے اقدامات سے ایک دوسرے کو کرونا واٸرس منتقل کرنے کے امکانات 100 فیصد ہیں مسجدیں بند کر دی گئی یہ کہہ کر کے اجتماع کرنے سے کرونا واٸرس پھیلنے کا خطرہ ہے اس اجتماع سے کرونا وائرس کا کوئی خطرہ نہیں مسجدوں میی اجتماع کی صورت میں نماز پڑھنے سے امام مسجد پر ایف آئی آر درج کی جاتی ہے لیکن اتنا بڑا اجتماع کرنے پر ایف آئی آر کیوں نہیں درج ھوئی کیا یہ 144 کی خلاف ورزی نہیں ہے عوام کی معاونت کرنا بلا شعبہ آچھا اقدام ہے لیکن حکومت اگر غریب عوام کو ریلیف دینے میں سنجیدہ ہے تو آن لاٸن ڈسک بنائے جاٸیں اور لوگوں کی رجسٹریشن کے لیئے آن لاٸن سسٹم بناۓ تا کہ لوگوں کی زندگیاں محفوظ رہیں اور کرونا واٸرس کو روکنے میں مدد ملے اس طرہ ہجوم بنا کر لوگوں کی زندگيوں سے کھیلنا بہت ہی خطرناک ہے