63

ٓآرڈی اے نے چکری روڈ راولپنڈی پرسات غیرقانونی ہاؤسنگ سکیموں کو متنبہ کیا

راولپنڈی ڈویلپمنٹ اتھارٹی (آر ڈی اے) نے شہریوں کو غیر قانونی رہائشی سکیموں میں سرمایہ کاری سے گریز کرنے کے لئے ایک ایڈوائزری جاری کی ہے،جس میں غیرقانونی ہاؤسنگ سکیموں میں سرمایہ کاری کی تمام تر ذمہ داری شہریوں کی ہوگی، آرڈی اے ترجمان کے مطابق چکری روڈ راولپنڈی پر سات غیر قانونی ہاؤسنگ سکیموں بلیو ورلڈ سٹی، عبداللہ سٹی، خانئال ہومز، بلیو ہلز، المکہ سٹی، دی ریجنٹ فارم اور سی بی آر ریزیڈنشیا آر ڈی اے سے منظور شدہ نہیں ہیں، قانون کے مطابق ان سکیموں کی حیثیت غیر قانونی ہے، آر ڈی اے نے پہلے بھی سب کو خبردار کیا ہے کہ آر ڈی اے کے زیرکنٹرول ایریا میں رہائشی سکیموں، اپارٹمنٹس منصوبوں، تجارتی عمارتوں وغیرہ کے اجراء کے لئے آر ڈی اے سے مطلوبہ این او سی حاصل کیے بغیر، اشتہار کے ذریعے ہر طرح کے اعلان، مارکیٹنگ اور اس طرح کے منصوبوں کی ترقی ایجنسیاں، نجی کمپنیوں، سول ملکیتی کمپنیوں، وغیرہ سب غیر قانونی ہیں، لہذا، آر ڈی اے عام لوگوں کو اپنے مفاد میں مشورہ دیتا ہے کہ وہ مذکورہ سات غیرقانونی رہائشی سکیموں میں کوئی سرمایہ کاری نہ کریں کیونکہ یہ غیر قانونی ہیں، مزید یہ کہ ان ہاؤسنگ سکیموں کے سپنسرز کو بھی متنبہ کیا گیا ہے کہ وہ اپنی غیر منظور شدہ / غیرقانونی ہاؤسنگ اسکیموں کی مارکیٹنگ کو فوری طور پر بند کریں اور قانون کے مطابق سکیم کی این او سی / منظوری حاصل کرنے کے لئے آر ڈی اے سے رابطہ کریں، بصورت دیگر، ان کے خلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی، آر ڈی اے ترجمان حافظ محمد عرفان نے بتایا کہ ڈائریکٹر جنرل آر ڈی اے عمارہ خان نے ایم پی اینڈ ٹی ای ڈائریکٹوریٹ آرڈی اے کو غیر قانونی / غیر مجاز رہائشی سکیموں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کی ہدایت کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں