محمد احسن یونس01 47

سی پی اوراولپنڈی نے ناقص تفتیش پر ایس ایچ او ٹیکسلا اورایس ایچ او صادق آباد کومعطل کر دیا

راولپنڈی:سی پی اوراولپنڈی نے ناقص تفتیش پر ایس ایچ او ٹیکسلا اورایس ایچ او صادق آباد کومعطل کر دیا،دونوں ایس ایچ اوز کے خلاف شہدا کے ورثاء نے ناقص تفتیش کی شکایت کی تھی،سی پی او نے شکایات پر نوٹس لیتے ہوئے دونوں ایس ایچ اوز کے خلاف ایکشن لیا، تفصیلات کے مطابق اے ایس آئی محمد ریاض شہید کے لواحقین سی پی او راولپنڈی سے ملے جنہوں نے سی پی او راولپنڈی محمد احسن یونس سے درخواست کی کہ اے ایس آئی محمد ریاض شہید کے مقدمہ کی تفتیش درست طور پر نہ کی گئی ہے جس کی وجہ سے مقدمہ کے تین ملزمان میں سے صرف دو ملزمان گرفتار ہوسکے جن میں سے ایک ملزم بری جبکہ دوسرا ضمانت پر رہا ہوگیا جبکہ مقدمہ کا تیسرا ملزم تاحال گرفتار نہ ہوسکا ہے جسکی گرفتاری کے لئے ایس ایچ او ٹیکسلا نے کوئی مناسب اقدامات نہ کئے،عدم گرفتار ملز م اشتہاری ہوچکا ہے،لواحقین نے کہا کہ ایس ایچ او ٹیکسلا سہیل ظفر ہمیں ہائی کورٹ میں آکر مقدمہ کی پیروی کا بھی کہتے ہیں جبکہ مقدمہ سٹیٹ کی طرف سے درج کیا گیا تھا،شہید کے ورثاء کی شکایت پر سی پی او راولپنڈی نے ایس ایس پی انوسٹی گیشن کو معاملہ کی انکوائری کا حکم صادر فرماتے ہوئے ایس ایچ او ٹیکسلا انسپکٹر سہیل ظفر کو ناقص تفتیش اورتیسرے ملزم اشتہاری کی گرفتاری کے سلسلہ میں غفلت برتنے پر معطل کر دیا،کانسٹیبل محمد مظہر شہید کے ورثاء نے سی پی او راولپنڈی کو بتایا کہ محمد مظہر شہید کوٹلی ستیاں میں شہید ہوئے تھے جس کے مقدمہ کے تفتیشی بشارت عباسی تھے،مقدمہ میں ملوث پانچ ملزمان گرفتار ہوئے مگر بشارت عباسی کی ناقص تفتیش کی وجہ سے پانچوں ملزمان مقدمہ بری ہوچکے ہیں،انسپکٹر بشارت عباسی کے خلاف ایس پی صدر کی انکوائری میں ناقص تفتیش ثابت ہوچکی ہے جبکہ اسی سلسلہ میں ریگولر محکمانہ انکوائری ایس پی پوٹھوہار کے پاس چل رہی ہے،لواحقین کے مواقف کو سننے کے بعد سی پی او محمد احسن یونس نے کہا کہ حالات واقعات کے پیش نظر یہ قرین انصاف ہے کہ انکوائری کی تکمیل تک بشارت عباسی کو ایس ایچ او تعینات نہ کیا جائے،انسپکٹر بشارت عباسی معطلی کے بعد عارضی طور پر بحال ہوکر ایس ایچ او تعینات ہوئے تھے،سی پی او نے عارضی بحالی کے احکامات واپس لیتے ہوئے انسپکٹر بشارت عباسی کو معطل کر دیا،انسپکٹر بشارت عباسی کو اپنا موقف پیش کرنے کا موقع دیا گیا جس کے بعد انہوں نے تھانہ میں جاکر اپنی بیماری کی رپورٹ لکھتے ہوئے روانگی کر دی،سی پی او نے اس موقع پر کہا کہ محکمانہ احتساب کا سلسلہ جاری رہے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں