51

راولپنڈی کے تھانہ پیرودہائی میں منی لینڈنگ سمیت فراڈ کی دفعات کے تحت درج مقدمہ

راولپنڈی کے تھانہ پیرودہائی میں منی لینڈنگ سمیت فراڈ کی دفعات کے تحت درج مقدمہ میں نامزد ملزم رضا الہی کو تمام ثبوت ہونے کے باوجود مقدمہ سے ڈسچارج کرنے پر مدعی مقدمہ نے ڈی ایس پی سٹی،ایس ایچ او پیرودہائی اور سب انسپکٹر کے خلاف سٹی پولیس آفیسر کو انکوائری و تبدیلی تفتیش کے لیے درخواست دیدی ،سی پی او نے ایس پی صدر کی سربراہی میںتین رکنی انکوائری کمیٹی تشکیل دیدی ،انکوائری کمیٹی میں اے ایس پی نیو ٹاون اور ڈی ایس پی کہوٹہ شامل ہیں۔مدعی مقدمہ خرم امتیاز نے سی پی او کو درخواست دی کہ اس سے سود اور زمین کی مد میں سابق وفاقی سیکرٹری عارف الہی ،اسکے بیٹے دانش الہی اور داماد رضا الہی کے خلاف تھانہ پیرودہائی میں منی لینڈنگ ایکٹ سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کرایا جس کے بعد سب انسپکٹر محسن حیات کو ساتھ لا کر رضا الہی کو لاہو ر سے گرفتار کرایا ملزم کو تھانہ پیرودہائی لیجانے کی بجائے سی پی او دفتر لایا گیا جہاں پر ملزم نے ایس ایس پی انویسٹی گیشن کے سامنے تمام الزامات کو درست قرار دیا ،ڈی ایس پی سٹی اور ایس ایچ او پیرودہائی نے ملزم کو تھانہ کی حوالات میں رکھنے کی بجائے مقامہ ہوٹل میں رات کو ٹھہرایا۔ ڈی ایس پی،ایس ایچ او پیرودہائی ظہیر بٹ نے ملزم کا ریمانڈ لینے کی بجائے اسے مقدمہ سے ڈسچارج کرایا تاہم عدالت نے ملزم کو ڈسچارج کرنے کی بجائے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجوا دیا ہے جبکہ سابق وفاقی سیکرٹری عارف الہی اور ان کا بیٹا دانش الہی گرفتار ہونا باقی تھا پولیس کو تمام ثبوت بھی فراہم کیے لیکن اسکے باوجود گرفتار ملزم کی ڈسچارجگی رپورٹ بنا کر عدالت میں پیش کی ملزمان تین فیصد سود ماہانہ اور میری 97کنال18مرلے اراضی کے پیسے بھی نہیں دے رہے سی پی او نے ایس پی صدر رائے مظہر کی سربراہی میں تین رکنی انکوائری کمیٹی تشکیل دے کر حکم دیا ہے اگر مدعی مقدمہ کے پاس تمام ثبوت موجود ہیں تو ملزمان کو دوبارہ گرفتار کیا جائے اور ذمہ داران پولیس افسران کے خلاف محکمانہ انکوائری کا عمل شروع کیا جائے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں