پنجاب_پولیس_پاکستان_لوگو 75

تھانہ ائیر پورٹ کے علاقہ میں بچے کے قتل کی واردات میں اہم ترین پیش رفت

راولپنڈی:تھانہ ائیر پورٹ کے علاقہ میں بچے کے قتل کی واردات میں اہم ترین پیش رفت،پولیس نے5ملزمان کو حراست میں لے لیا،حراست میں لئے جانے والے ملزمان میں لمبے عرصہ تک روپوش رہنے والا بچے بچیوں کے ساتھ غیر اخلاقی حرکات کا عادی ریکارڈ یافتہ ملزم بھی شامل ہے،اگلے24گھنٹوں میں واردات مکمل طور پر ٹریس ہونے کا امکان،تفصیلات کے مطابق تھانہ ائیر پورٹ کے علاقہ میں دوسری جماعت کے طالبعلم نوید کی لاش ملنے کا معمہ حل ہونے کے قریب ہے اس وقوعہ میں سی پی او فیصل رانا نے مانیٹرنگ اور ایس پی پوٹھوہارسید علی کی24/7جائے وقوعہ پر لگائے گئے کیمپ آفس میں کام کرنے کی وجہ سے اہم اور نتیجہ خیز پیش رفت ہوئی ہے،اس سلسلہ میں ایس پی پوٹھوہار سید علی نے سٹی پولیس آفیسر ڈی آئی جی محمد فیصل رانا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ پولیس نے جدید سائنسی ٹیکنالوجی کو استعمال میں لاتے ہوئے 5ایسے ملزمان حراست میں لے کر ان سے تفتیش شروع کی ہے جن کا ابتدائی شواہد میں اس نوعیت کی وارداتوں سے کسی نہ کسی حوالے سے تعلق سامنے آ رہا ہے،پولیس نے شواہد کی بنیاد پر ایک ملزم انجم اشفاق کو حراست میں لیا جو بچے بچیوں کے ساتھ غیر اخلاقی حرکات کا عادی ہے ماضی میں متعدد دفعہ ایسے واقعات کے بعد پنچائت اور جرگہ میں معافی مانگ چکا ہے یہ ملزم بچے کی لاش ملنے کے بعد اچانک غائب اور روپوش ہو گیا جسے تلاش کر کے حراست میں لیا گیا،پولیس نے کباڑ کا کام کرنے والے سرگودھا کے رہائشی عمران،مشکوک حرکات کرنے والے نوید،مشتبہ ریکارڈ رکھنے والے باپ بیٹا میر زمان اور عبد الرزاق کو حراست میں لیا انہوں نے بھینسوں کا واڑہ بنا رکھا ہے،ایس پی نے بتایا کہ ان ملزمان سمیت دیگر مشتبہ افراد سے پوچھ گچھ جاری ہے،ایس پی نے بتایا کہ حراست میں لئے گئے ان5ملزمان سے ایسے شواہد دستیاب آئے ہیں جس کی وجہ سے اس بات کا قوی امکان ہے کہ اگلے24گھنٹوں میں بچے کے قتل کی واردات کا معمہ نہ صرف حل ہو گا واردات ٹریس ہو گی اور حقیقی ملزمان گرفتار ہوں گے،سی پی او نے واردات کو ٹریس کرنے کے حوالے سے ایس پی کی کوششوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی اندھی واردتیں پروفیشنل پولیسنگ کی وجہ سے ہی ٹریس ہوتی ہیں،انہوں نے کہا کہ جائے وقوعہ پر عارضی کیمپ آفس میں پولیس کے24/7کام سے پنڈی پولیس کے کل وقتی کام کرنے کا مثبت تاثر عوام کے سامنے آیا ہے،سی پی او نے کہا کہ اس واردات کے حوالے سے مجھے اپ ڈیٹ رکھا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں