.ڈینگی 60

شہر بھر میں بروقت صفائی نہ کی گئی اور ناقص حکمت عملی کے باعث ڈینگی کے مریضوں تعداد خطرناک حد تک اضافہ

راولپنڈی ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کی کارکردگی کا پول کھل گیا جب شہر بھر میں بروقت صفائی نہ کی گئی اور ناقص حکمت عملی کے باعث ڈینگی کے مریضوں تعداد خطرناک حد تک اضافہ ہوتا جا رھا ھے. کمپنی کا آپریشن ڈیپارٹمنٹ مکمل فلاپ ہوچکا ہے، ڈاکٹر حامد کی سربراہی میں کام کرنے والے اس ڈپارٹمنٹ کی کارکردگی کا یہ حال ہے کہ اول تو صفائی نہیں ہوتی اگر ہوجائے تو کوڑا کرکٹ آٹھانے میں دو دو دن لگ جاتے ہیں جس پر مچھروں کی بھرمار بھنبناتی ہے اور لوگوں کو ڈینگی اور ملیریا کا شکار بناتے ہیں. عوامی حلقوں نے سوال اٹھایا ہے کہ اگر بروقت صفائی ہوتی تو یہ حالات پیدا ہی نہ ہوتے، ڈینگی کی وجہ سے کوئی وفات ہوجائے یا مریض ہو تو عملہ حرکت میں آجاتا ہے جس کے سدباب کی ضرورت ہے. بروقت اقدامات نہ کرنے پر ڈینگی کی وباء سے ہلاک ہونے والے معصوم شہریوں کی ہلاکت کا ذمہ دار کون ہے. شہریوں نے وزیراعظم پاکستان عمران خان، وزیراعلٰی پنجاب عثمان بزدار، وزیربلدیات بشارت راجہ، کمشنر و ڈپٹی کمشنر راولپنڈی سے مطالبہ کیا ہے کہ انسانی جانوں کے ضیاع کا نوٹس لیا جائے اور ذمہ داران کیخلاف کارروائی عمل میں لائی جائے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں