murree-pakistan-post 91

محکمہ ڈاک میں اصلاحات کے تمام دعوے جھوٹ،تبدیلی سرکار محکمہ ڈاک میں بھی تبدیلی نہ لاسکی ہے

راولپنڈی محکمہ ڈاک میں اصلاحات کے تمام دعوے جھوٹ،تبدیلی سرکار محکمہ ڈاک میں بھی تبدیلی نہ لاسکی ہے اقرباء پروری عروج پر پہنچ گئی ڈپٹی پوسٹ ماسٹر جنرل نادرن پنجاب سرکل راولپنڈی اعجاز کھوکھر نے ایک ماہ بعد ریٹائر ہونے والے ویسٹریج پوسٹ آفس کے پوسٹ ماسٹر راجا یاسین کی اپ گریڈیشن کرتے ہوئے انہیں سینئر پوسٹ ماسٹر سیٹلائیٹ ٹاؤن تعینات کردیاہے انہوں نے مبینہ طور پر اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کرنے ہوئے محض راجا یاسین کو نوازنے کیلئے سینئر پوسٹ ماسٹر ڈاکخانہ سیٹلائیٹ ٹاؤن فہد منظر کو جبری رخصت پر بھیج کر راجا یاسین کی تعیناتی کیلئے راہ ہموا ر کی ہے تفصیلات کے مطابق ڈپٹی پوسٹ ماسٹر جنرل نادرن پنجاب اعجاز کھوکھر وزیر مواصلات و پوسٹل سروسز مراد سعید کی آنکھوں میں دھول جھونکنے لگے ہیں 16اکتوبر کو 60سال کی عمر پوری ہونے پر ریٹائرہو نے والے ویسٹرج پوسٹ آفس میں تعینات راجہ محمد یاسین کوسکیل 14 سے پرموٹ کرتے ہوئے سینئر پوسٹ ماسٹر سیٹلائیٹ ٹاؤن گریڈ16 میں تعینات کر دیا ہے واضح رہے کہ اس مقصد کیلئے ان کے پیش رو فہد نظر کو جبری رخصت پر بھی بھیجا گیا ہے راجا یاسین کی ریٹائرمنٹ سے ایک ماہ قبل بطورسینئر پوسٹ ماسٹر تعیناتی سے نہ صرف راجہ محمد یاسین کو20فیصد اضافی تنخواہ ملے گی بلکہ اسکی گریجوئٹی میں بھی اضافہ ہوگا‘اور انہیں پینشن بھی زیادہ ملے گی یہاں تک کہ اسکے فوت ہونے کی صورت میں اسکی بیوہ کو بھی زیادہ پنشن ملے گی اور اس کا تمام تر بوجھ محکمے پر پڑے گا دوسری طرف راجا محمد یاسین نوپ کے جنرل سیکر ٹری بھی ہیں تاہم قانون کے تحت کسی بھی یونین کا لیڈر انتظامی امور کا افسر مقرر نہیں ہوسکتا ہے، واضح رہے ویسٹرج پوسٹ آفس ڈیلیوری آفس ہے اور دونوں پوسٹ آفسز میں ڈیوٹی کے اوقات کار یکساں ہیں جبکہ ویسٹریج پوسٹ آفس اور سیٹلائٹ ٹاؤن پوسٹ آفس میں کم و بیش ایک گھنٹے کا فاصلہ ہیاور ایک شخص کیلئے دونوں جگہوں ڈیوٹیا ں دینا ناممکن ہے دوسری طرف راجا یاسین نے بھی ڈپٹی پی ایم جی اعجاز کھوکھر کو خوب نواز رہے ہیں راجہ یاسین بھی راجہ یاسین نے مبینہ طور پر ویسٹریج پوسٹ آفس کے ایک پیکر سے سرکاری کام چھڑوا کر اسے ڈپٹی پوسٹ ماسٹر جنرل اعجاز کھوکھر کے والد کی خدمت پر مامور کر رکھا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں