گوشت اور روٹی 73

راولپنڈی ضلعی انتظامیہ گوشت اور روٹی کی قیمتیں کم کرانے کی کوششوں میں ناکامی

راولپنڈی ضلعی انتظامیہ گوشت اور روٹی کی قیمتیں کم کرانے کی کوششوں میں ناکامی کی طرح سبزی فروٹ کی قیمتوں کوبھی اعتدال میں لانے میں کامیاب نہیں ہوسکی۔ انتظامیہ کے جاری کردہ نرخوں کے برعکس ہر جگہ اشیائے خور ونوش کی کئی گنا زائد قیمتوں کی وصولی کا سلسلہ جاری ہے اور عوام مہنگائی کے ہاتھوں لٹنے پر مجبور ہوچکےہیں۔ صدر ، چونگی نمبر بائیس ، ٹنچ بھاٹہ،راجہ بازار ،صادق آباد ،شمس آباد سمیت کینٹ و شہر کے دیگر علاقوں کی مارکیٹوں میں پیر کو بھی ادرک چار سو روپےکلو فروخت ہوا۔جبکہ ٹماٹر کی قیمتیں بھی بڑھنا شروع ہوگئی ہیں اور 70/80روپے میں بک رہاہے۔پیاز 80روپے کلو جبکہ لہسن 70روپے کا پائو مل رہاہے۔پیر کو سیب کے نرخ بھی بڑھے اور 120روپے ملنے والا سیب150روپے کلو میں فروخت ہوا۔ انگور 200 روپے کلو جبکہ کیلا80روپے درجن میں بیچا گیا۔گھیا اور کریلے کے نرخ پیر کو 80روپے کلو رہے۔شملہ مرچ120روپے کلو میں فروخت ہوئی۔فراش بین100روپےکلو بینگن60روپےکلو رہے۔ کریانہ فروشوں نے عام نسوار کی پڑیابھی یکمشت 10سے 15روپے جبکہ سپیشل نسوار20روپے کردی ۔بکرے کا گوشت ایک ہزار سے 1050روپے کلوبڑا گوشت500/600روپےکلو جبکہ دودھ 110اور دہی 120روپے میں فروخت ہورہاہے ۔نان بدستور12،قلچہ15روپے میں بیچا جارہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں