میٹر 25

مری میں واپڈا تاجروں کے بجلی کے میٹر اتارلئے

مری لاک ڈاؤن کے دوران محکمہ واپڈا نے غریب تاجروں اوررہائشی لوگوں کے میٹر اس وقت اتار لئے جب تمام دوکانیں بند ہیں تاجروں کا شدیداحتجاج ان کاکہناہے کہ حکومت ایک طرف تو بجلی اور گیس کے بلوں میں خصوصی رعائت دینے کے دعوے کررہی ہے جبکہ محکمہ واپڈا مری نے حکومتی وعدوں کی نفی کرتے دوماہ سے بند بازاروں سے تاجروں کے بجلی کے میٹر اتارلئے موجودہ کوروناوائرس کی وباء کے بعد مری کا کاروبار مکمل طور پر بند ہے اور ملک کے دیگر علاقوں سے قبل مری سمیت تمام سیاحتی مقامات کو حکومت نے لاک ڈاؤن کردیا تھا مری میں کاروبار کرنے والے زیادہ تر تاجر کرایہ کی دوکانوں پر کاروبار کرتے ہیں اور جب لاک ڈاؤن ہوا تو اکثر لوگ دوکانیں بندکرکے اپنے گھروں کو چلے گئے تھے اس دوران ان کو بجلی کے بل نہ مل سکے جس کی و جہ سے وہ بل ادا نہ کرسکے جبکہ موجودہ سنگین صورتحال میں دو وقت کا کھانا مشکل ہوچکا ہے ایسے میں محکمہ واپڈا نے تاجروں کے میٹراتارکرزیادتی کی ہے جبکہ میٹر واپڈا کی ملکیت نہیں ہیں انکی قیمت صارف نے اد ا کی ہوئی ہوتی ہے صرف بجلی کاٹنے کا اختیار ہے محکمے کو کاروباری حلقوں اور عوامی حلقوں نے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طورپر ان کے میٹر واپس لگائے جانے کے احکامات جاری کئے جائیں او ر ذمہ داران کو ہدایات دی جائیں کہ موجودہ صورتحال تک نہ تو بجلی منقطع کیاجائے اور نہ ہی صارفین کے میٹر اتارے جائیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں