41

حکومت نے احساس پروگرام کے تحت احساس مالیاتی شمولیت اقدامات کا آغاز کردیا

حکومت نے احساس پروگرام کے تحت احساس مالیاتی شمولیت اقدامات کا آغاز کردیا ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے اس حوالے سے منگل کو یہاں منعقدہ تقریب میں شرکت کی۔ اس موقع پر ہالینڈ کی ملکہ میکسیما بھی موجود تھیں۔ یہ پروگرام بنیادی طور پر چار خصوصیات کا حامل ہے احساس کفالت ایک عورت ایک بینک اکاﺅنٹ انقلابی پروگرام ہے جو بی آئی ایس پی کیش ٹرانسفر اسکیم میں اصلاحات لائے گا۔ یہ “ایک عورت ، ایک بینک اکاﺅنٹ” کے ذریعے ڈیجیٹل اور مالی شمولیت کے قابل بنائے گا۔ یہ پروگرام صرف رقوم کی منتقلی تک محدود نہیں بلکہ اس سے ادائیگی ، بچت ، کریڈٹ اور انشورنس کی مصنوعات کی تکمیل کو یقینی بنائے گا۔مزدور کا احساس غیر رسمی مزدورں کے لئے بنک اکاﺅنٹ ہے ان بینک اکاﺅنٹس سے غیر رسمی کارکنوں کو پنشن تک رسائی ممکن بنائی جائے گی اس کا ایک اور اہم پہلو مالی شمولیت کا ہے۔ اس سے حکومت غیر رسمی شعبے کے کارکنوں کو مزید تحفظ فراہم کرنے کے ساتھ کم سے کم اجرت پر عمل درآمد کر سکے گی۔جولائی میں نیشنل پاورٹی گریجویشن انیشیٹو کا آغاز کیا گیا تھا، اس سے سماجی تحرک کے عناصر ، معیار زندگی میں بہتری ، مالی شمولیت (بلا سود قرضے ، اثاثوں کی منتقلی اور پیشہ ورانہ تربیت) کو منضبط کیا گیا ہے تاکہ غربت کو انہتائی کم سطح پر لایا جائے اور پائیدار ترقی میں منتقل کیا جاسکے۔ یہ اقدام 100 سے زیادہ اضلاع میں شروع کیا جارہا ہے اور چار سالوں میں ایک کروڑ ساٹھ اٹھائیس ہزار افراد مستفید ہوں گے جس میں 50 فیصد خواتین شامل ہیں۔اس پروگرام کے تحت ملک بھر میں ہر ماہ 80ہزار قرضے تقسیم کیے جاتے ہیں۔روزانہ اجرت پر کام کرنے والوں کو مائیکرو کریڈٹ کی سہولت فراہم کی گئی ہے ۔پاکستان میں غریب طبقہ اخراجات کے مابین فرق کو کم کرنے کے لئے غیر رسمی قرضوں کی سہولیات پر انحصار کرتے ہیں۔ ان موبائل والٹس کی ترقی کے ساتھ ایک بٹن کے کلک پر موبائل ٹیکنالوجی کے ذریعہ نینو یا چھوٹے قرضے فراہم کرنے کی طرف منتقلی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں