Usman Kakar 55

عثمان کاکڑ کے معاملے پر جوڈیشل انکوائری کیلئے تیار ہیں، وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال

کوئٹہ: وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے کہا ہے کہ عثمان کاکڑ کے معاملے پر جوڈیشل انکوائری کرانے کیلئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزرا نے اپوزیشن سے مذاکرات کی کوشش کی، بجٹ کی منظوری سے اپوزیشن کو سیاسی نقصان ہوگا، تین سالوں کے دوران صوبے کی ترقی کے لیے خزانے کے دروازے کھول دیے ہیں۔

وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے اسمبلی اجلاس کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ عثمان کاکڑ کے معاملے پر جوڈیشل انکوائری کرائی جائے گی، ورثا کے ساتھ مکمل تعاون کرینگے۔ اپوزیشن کے احتجاج کے حوالے سے جام کمال نے کہا کہ اپوزیشن کو بار بار اجلاس میں شرکت کا کہتے رہے، اپوزیشن کے بغیر اجلاس میں ہلہ گلہ نہیں تھا۔ سپیکر نے اپوزیشن اراکین کے خلاف درج ایف آئی آر سے متعلق اچھی رولنگ دی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کو اندازہ تھا کہ اگر یہ بجٹ منظور ہو گیا تو انہیں سیاسی نقصان ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان کی تاریخ میں ہماری حکومت نے سب سے زیادہ بجٹ خرچ کیا۔ ترقیاتی کاموں کے لیے تیں سالوں میں خزانے کے دروازے کھول دیے۔

سردار یار محمد رند کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ وہ میرے لئے قابل احترام ہیں، وہ ناراض بھی ہو جاتے ہیں، خوش بھی ہو جاتے ہیں، ان سے متعلق کچھ نہیں کہوں گا، وہ میرے والد کے ساتھ کام کر چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں امن وامان کی صورتحال بہتر ہے۔ کابینہ میں تبدیلی نہیں کر رہے، وزرا خود استعفوں کی صورت میں تبدیلی کر رہے ہیں۔