Lahore meeting 68

لاہور جلسہ میں عوام نے پی ڈی ایم کا بیانیہ مسترد کر دیا، فواد چوہدری ڈاکٹر شہباز گل کی پریس کانفرنس

اسلام آباد۔:وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی روابط ڈاکٹر شہباز گل نے کہا ہے کہ لاہور جلسہ میں عوام نے پی ڈی ایم کا بیانیہ مسترد کرکے وزیراعظم عمران خان کے خوشحال پاکستان کے وژن کا ساتھ دیا، نواز شریف نے پنجابیوں کی پیٹھ میں چھرا گھونپا، (ن) لیگ کے ارکان اسمبلی اور عام کارکن اس ٹبر کے پیچھے نہ چلیں، لاہور جلسہ کی ناکامی سے ان کا راج ختم ہو گیا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ میر جعفر اور میر صادق جو محمود اچکزئی ہیں، میں ان کی مذمت کرتاہوں۔ انہوں نے کہا کہ کل شریفوں کے راج کا آخری دن تھا، کل وہ سحر ٹوٹ گیا، کل لاہور میں شریفوں کی داستان دفن ہو گئی۔ معاون خصوصی نے کہا کہ جس طرح مریم صفدر نے (ن) لیگ کی تباہی کی، پی ٹی آئی کو اب کچھ کرنے کی ضرورت نہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم سمجھتے تھے اکیلے نواز شریف ہی ایجنڈے پر ہیں، اچکزئی کے والد کی بھی یہی تاریخ ہے، یہ جدی پشتی پاکستان کے خلاف ہیں، نوازشریف کی بیٹی نے ان کو پلیٹ فارم دیا ان کا داﺅ لگ گیا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کی سرزمین نے سات نشان حیدر حاصل کئے ہیں، یہ پنجاب ہی ہے جس کے جنگ آزادی میں دو ٹکڑے ہوئے، ہم نے ملک کی خاطر ہر چیز کھو دی۔ انہوں نے کہا کہ (ن) لیگ کے ایم این ایز سے کہتا ہوں ان کے پیچھے نہ چلیں، لاہور میں مسلم لیگ (ن) کے 30 ایم این اے ہیں، وہ ایک ایک ہزار بندہ بھی جلسے میں نہیں لا سکے، جو ایم این اے ایک ہزار بندہ جلسے میں نہیں لا سکا اسے استعفیٰ دے دینا چاہئے۔ معاون خصوصی نے کہا کہ پیپلز پارٹی والے اپنے چیئرمین سے پوچھیں وہ کن کاموں میں لگ گئے، کیا وہ پیپلز پارٹی میں ہی ہیں یا (ن) لیگ میں وائس چیئرمین بن گئے۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم والوں نے کے پی میں پاکستان تحریک انصاف کے حامیوں کو گالیاں دیں، کراچی میں مہاجروں کی دل شکنی کی، پنجاب میں جو کچھ ہوا ہے وہ سب کے سامنے ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کے ارکان قومی اسمبلی اور عام کارکنان سے کہتا ہوں کہ وہ اس چوڑ ٹبر کے پیچھے نہ چلیں، پی ٹی آئی کی مخالفت کریں لیکن ملک کو نشانہ نہ بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم کے ارکان اسمبلی پنجاب اسمبلی اور قومی اسمبلی کے سپیکرز کو استعفے دیں تاکہ ان کو شرم دلائی جا سکے، یہ ناکام ہو چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آج سٹاک ایکسچینج میں 800 پوائنٹس کا اضافہ ہوا جو حکومت پر اعتماد کا مظہر ہے۔ انہوں نے کہا کہ منتخب نمائندوں کو اس طرح کے کاموں میں نہیں پڑنا چاہئے، ان کی وفاداری صرف پاکستان سے ہونی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ مریم نواز نے لاہور جلسہ کیلئے سولو فلائٹ کی اور 22 روز تک گلی گلی میں جا کر جلسہ میں شرکت کی دعوت دی لیکن ان کا جلسہ ناکام رہا، عوام نے وزیراعظم عمران خان کے خوشحال پاکستان کے وژن کا ساتھ دیا۔