27

ایم این اے ہوسٹل میں مقیم پارلیمنٹیرینز کی رہائش گاہوں میں رمضان المبارک سے قبل صفائی ستھرائی کا خصوصی انتظام

ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری کی ہدایات پر کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے حکومت کی جانب سے متعین کردہ گائیڈ لائنز پر عملدرآمد کرتے ہوئے پارلیمنٹ لاجز اور ایم این اے ہوسٹل میں مقیم پارلیمنٹیرینز کی رہائش گاہوں میں رمضان المبارک سے قبل صفائی ستھرائی کا خصوصی انتظام کر دیا گیا ہے اس ضمن میں پارلیمنٹ لاجز اور ایم این اے ہوسٹل کی عمارات میں حفاظتی اقدامات کے تحت جراثیم کش محلول اور کلورین سپرے کرایا گیا ہے تاکہ پارلیمنٹیرینز اور ان کے ملازمین کو کورونا وائرس سے محفوظ رکھا جا سکے جبکہ دونوں عمارات کی لابی اور راہداریوں سمیت اہم جگہوں پر ھینڈ سینی ٹائزر رکھے گئے ہیں۔ کورونا وائرس کا پھیلائو روکنے کیلئے جراثیم کش محلول کے سپرے کے علاوہ آگاہی مہم بھی جاری ہے اور دونوں عمارات میں کام کرنے والے سی ڈی اے کے ملازمین میں ماسک اور سینی ٹائزر کا استعمال لازمی قرار دیا گیا ہے۔
اس سلسلے میں آج ڈائریکٹر ٹو ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی کاشف زمان نے ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی کی ہدایات پر پارلیمنٹ لاجز اور ایم این اے ہوسٹل میں رمضان المبارک میں صفائی کے لیے کیے گئے انتظامات کا جائزہ لیا۔ دونوں عمارات کی دیکھ بھال پر مامور انتظامیہ نے انھیں بتایا کہ دن میں 2 مرتبہ فرش و دیگر حصوں کی جراثیم کش محلول سے صفائی کی جاتی ہے اور ممبران قومی اسمبلی کے کمروں کی صفائی پر مامور عملے کے لیے خاص ملبوسات تیار کیے گئے ہیں اور احتیاطی تدابیر و حفظانِ صحت کے اصولوں کے مطابق صفائی پر مامور عملہ ان ملبوسات کے ساتھ ہر کمرے کی صفائی کر رہا ہے جبکہ پارلیمنٹیرینز کی ڈیمانڈ پر صفائی کے لیے جراثیم کش محلول الگ سے بھی مہیا کیا جاتا ہے جس کی وافر مقدار عمارات کی انتظامیہ کے پاس موجود ہے۔ انتظامیہ نے بتایا کہ پارلیمنٹ لاجز میں تراویح پڑھنے کا انتظام کر دیا گیا ہے اور حکومت کی وضح کردہ احتیاطی تدابیر پر عمل کرتے ہوئے پارلیمنٹ لاجز کی مسجد سے قالین نکلوا دیئے گئے ہیں مسجد کے فرش کو جراثیم کش محلول سے صاف کرنے کے بعد نمازیوں کے لیے 6، 6 فٹ کے فاصلے پر نماز ادا کرنے کے لیے نشان بھی لگا دیے گئے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں