ali-muhammad-khan 46

37 ملزمان گرفتار کئے گئے’ وزیر مملکت علی محمد خان

اسلام آباد ۔قومی اسمبلی کو وزارت داخلہ کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ انسانی اعضاء کی تجارت کے حوالے سے 2014ء سے 2019ء تک سات مقدمات درج کئے گئے اور 37 ملزمان گرفتار کئے گئے’ یہ تمام مقدمات عدالتوں میں زیر سماعت ہیں’ ابھی تک کسی کو سزا نہیں ہوئی۔ جمعہ کو قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران نفیسہ عنایت اللہ خٹک کے انسانی اعضاء کی تجارت کے حوالے سے سوال کے جواب میں وزارت داخلہ کی جانب سے بتایا گیا کہ 2014ء سے 2019ء تک 7 مقدمات درج کئے گئے اور 37 ملزمان گرفتار کئے گئے۔ یہ مقدمات عدالتوں میں زیر سماعت ہیں، ابھی تک کسی کو سزا نہیں ہوئی۔ ایک ضمنی سوال کے جواب میں وزیر مملکت علی محمد خان نے کہا کہ انسانی اعضاء کی تجارت میں اضافہ نہیں ہوا، سزائیں دینا عدالتوں کا کام ہے، حکومت کا اس میں کوئی عمل دخل نہیں ہے، ایف آئی اے کی طرف سے اس میں کوئی کمی نہیں کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی شخص کو انسانی اعضاء کا تحفہ اس کا قریبی عزیز خون کا نمونہ ملنے پر دے سکتا ہے، اس ضمن میں قانون سازی درکار ہے۔ کشور زہرہ کے ضمنی سوال کے جواب میں وزیر مملکت علی محمد خان نے کہا کہ اس ضمن میں اسلامی نظریاتی کونسل کی رائے بھی لینی ہوگی، کسی کو بچوں کی کفالت کے لئے بھی اعضاء بیچنے کی اجازت بھی نہیں دی جاسکتی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں