Bulk water scheame picture 10

ملکہ کوہسار مری اور نواحی علاقوں میں پانی کی شدیدقلت

مری ملکہ کوہسار مری اور نواحی علاقوں میں پانی کی شدیدقلت عوام خصوصاً گھریلوں خواتین کو پانی کے حصول کیلئے شدیدمشکلات کاسامنا کوروناوائرس اور لاک ڈاؤن کے باعث مری اور مضافات میں سیاحوں کی آمد پر تاحال مکمل پابندی ہے کسی سیاح کو سترہ میل ٹول پلازہ جی ٹی روڈ اور ایکسپریس وے پر پھلگراں ٹول پلازہ پر ناکے لگا کر سیاحوں کو مری داخل ہونے سے روک دیاجاتا رواں گرمائی سیزن میں مری کے تمام ہوٹل اور ریسٹورنٹس بند ہیں اور پانی کااستعمال بہت کم ہے اس کے باوجود مری شہر میں پانی کی شدید مصنوعی قلت پیدا کرکے عوام کو پریشان کیاجارہا ہے، عوامی اور کاروباری حلقوں کاکہنا ہے کہ مری شہر اورتحصیل بھر کے عوام کو وافر مقدارمیں پانی کی فراہمی کیلئے پی ٹی آئی کے مرکزی رہنماء وسابق تحصیل ناظم مری سردار محمدسلیم خان نے اپنے دورنظامت میں بلک واٹر سپلائی سکیم منظورکروائی تھی جس پر کام بھی شروع ہوگیاتھا اور اربوں روپے کے پانی کے پائپ،مشینری اوردیگر قیمتی پرزے خرید کرموقع پر پہنچابھی دئیے گئے تھے جو اب زنگ آلود ہوچکے ہیں اور عوام کے اربوں روپے کا قیمتی سامان جنگلوں اورشاہراہوں پر پڑے پڑے خراب ہورہا ہے،بلک واٹرسپلائی سکیم انتہائی اہمیت کی حامل ہے لیکن حکومت کی تبدیلی کے بعد یہ سکیم بندکردی گئی بعد ازاں 2018 کے عام انتخابات میں تحریک انصاف نے مری کے عوام سے وعدہ کیاتھا کہ بلک واٹر سپلائی سکیم کوبحال کرکے اس کو مکمل کیاجائیگا تاکہ مری میں پانی کی قلت کا دیرینہ مسئلہ حل ہوسکے لیکن دوسال کاعرصہ گزرنے کے باوجود تاحال اس سکیم کو نہ تو بحال کیاگیا ہے اور نہ ہی اس سلسلے میں کوئی پیشرفت نظرآرہی ہے تحریک انصاف نے انتخابی وعدہ بھی وفانہ کرسکی ہے،تحصیل مری اور شہر کی حالت زار یہ ہے کہ لوگ دور دورکے علاقوں سے روزمرہ کے استعمال کا پانی گاڑیوں میں لاتے ہیں جبکہ اب کئی قدرتی چشمے بھی خشک ہوچکے ہیں اور کئی دیہی علاقوں میں تو پانی کی شدید قلت پیدا ہوچکی ہیں اور لوگ خصوصاًخواتین رات بھر چشموں پر کھڑے رہتے ہیں اور چشموں سے نکلنے والا قطرہ قطرہ پانی جمع کرکے بمشکل اپنی ضرورت پوری کرتے ہیں اگر بلک واٹر سپلائی سکیم بروقت مکمل کرلی جاتی تو جہاں تحصیل مری اور مری سٹی کے عوام کو وافر مقدارمیں پانی ملناتھا ملتا وہاں اسلام آباد اور راولپنڈی کو بھی پانی بغیر بجلی کے خرچ کے سپلائی ہوسکتا تھا عوامی اورکاروباری حلقوں نے وزیراعظم عمران خان،ممبرقومی اسمبلی اور ممبر صوبائی اسمبلی سے انتخابی وعدے پوراکرنے اور بلک واٹر سپلائی سکیم کو فوری بحال کرنے کامطالبہ کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں