Hafiz Javeed Abbasi murree 154

طویل لاک ڈاؤن نے مری کی ہوٹل انڈسٹری اور کاروبارکو شدید مشکلات سے دوچار،حافظ جاوید اختر اخترعباسی

مری ہوٹل ایسوسی ایشن مری رجسٹرڈ کے صدر حافظ جاوید اخترعباسی نے کہا ہے کہ مری میں دوماہ سے جاری طویل لاک ڈاؤن نے مری کی ہوٹل انڈسٹری اور کاروبارکو شدید مشکلات سے دوچار کردیا ہے مری کی معیشت کا ساران انحصار سیاحت پر ہے مگر 2 ماہ سے مری کی ہوٹل انڈسٹری بند ہے او سیاحوں کی آمد پر پابندی عائد ہے ہوٹل اورکاروبار بندہونے سے ہوٹل انڈسٹری سے وابستہ ہوٹل مالکان اور ہزاروں دیہاڑی دار ملازمین کی مشکلات بہت بڑھ گئی ہیں اورجب تک مری کو سیاحوں کیلئے نہیں کھولاجائیگا اس وقت تک مری کے کارباری حلقوں اور انکے ملازمین کی مشکلات ختم نہیں ہوسکے گیں حافظ جاوید اخترعباسی نے مری میڈیاسے گفتگوکرتے ہوئے کہا ہ مری کی الگ حیثیت ہے اوریہاں کا تین ماہ کاکاروباری سیزن ہوتا ہے حکومت مری کیلئے الگ ایس اوپیز (طریقہ کار)مرتب کرے اور سیاحوں کی آمد پر پابندی ختم کرے،حکومت ان معاملات پر سنجیدگی سے غورکرے اور مری کی ہوٹل انڈسٹری کومکمل ایس اوپیز کے تحت فوری طور پر کھولنے کے اجازت دے بصورت دیگر ہوٹل انڈسٹری سے وابستہ ہزاروں ملازمین کے گھروں کے چولہے پہلے سے ہی ٹھنڈے ہوچکے ہیں اوراب انکے صبر کے پیمانے لبریز ہوچکے ہیں پنجاب حکومت سیاحوں پر عائد پابندی فوری ختم کرے ہوٹل انڈسٹری اورمری کی تاجر برادری حفاظتی انتظامات پر مکمل عملدرآمد کو ہرصورت یقینی بنائے گی انہوں نے کہا کہ ہوٹل مالکان یہاں پر تمام حفاظتی انتظامات جن میں واک تھروگیٹس،سینٹائزر،سکیننگ کا عمل اوردیگر تدابیر پر مکمل عملدرآمد کرنیکے لئے تیار ہیں اگر سیاحوں کو جلد مری آنے کی اجازت نہ دی گئی تو آنے والے دنوں میں ہوٹل انڈسٹری سے وابستہ لوگوں اور کاروباری حلقوں کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوجائیگا۔