gpo chock murree 19

مری میں لاک ڈاون کو ڈیڑھ ماہ سے مکمل لاک ڈاؤن

مری میں لاک ڈاون کو ڈیڑھ ماہ سے زیادہ وقت گزرچکاھے اورسیاحوں کی آمدورفت مکمل طور پر معطل تمام رہائشی ھوٹلزگیسٹ ہاؤس اور کاروبار بند ہیں ہزاروں دیہاتی دارمزدوراوران کاروباری اداروں میں کام کرنے والے ملازمین بے روزگارھولرگھروں میں بیٹھے ہوئے جوشدیدمعاشی مشکلات سے دوچار ہیں جبکہ بڑی تعداد میں سفید پوش طبقہ بری طرح متاثر ھوتا ھے اوردووقت کی روٹی کا حصول مشکل بن چکا ھے ایسے میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت اور وزیراعظم کی جانب سے احساس پیکج کے تحت 12ہزارروپے کے معاشی پیکج کااعلان کیاگیاتھا جس کیلئے بڑی تعدادمیں لوگوں نے میسج کے ذریعے رجسٹریشن کرائی تھی مگر ابھی تک غریب لوگوں کی اکثریت موبائل پرمیسج کے جواب کیلئے مارے مارے پھررھے ہیں جبکہ دوسری جانب مری کے مختلف نواحی علاقوں میں پی ٹی آئی کے نمائندوں کی جانب سے بھیجی گئی لسٹوں کے مطابق کچھ لوگوں کو12ہزارکی امداد مل چکی ھے اورجولسٹیں پی ٹی آئی کے نمائندوں کی طرف سے بنائی گئی ہیں ان میں بھی تعلقات اور سیاسی بنیادوں پر نام شامل کیئے گئے ہیں اور انتہائی مستحق لوگوں کے نام شامل نہیں کیئے گئے اور انہیں امداد سے محروم رکھا گیاھے جبکہ اسی طرح سابق وزیراعظم شاہدخاقان عباسی کی طرف سے مسلم لیگ ن کے لوگوں نے یوسی دریاگلی اوڑہ تپہ کیرسمیت جن نواحی علاقوں میں کچھ راشن تقسیم کیاھے وہ بھی سب سیاسی بندر بانٹ ھو رھی ھے اورراش بطورسیاسی رشوت تقسیم کیا جارھاھے ھے منطورنطرلوگ نوازے جارھے ہیں جبکہ بعض انتہائی مستحق افرادکوسیاسی وابستگی کو ذاتی پسندناپسندکی بناپرنظراندازکیئے گئے ہیں یہاں یہ امر قابل زکرھے کہ الخدمت فاونڈیشن۔مری اور ویلفیئرسوسائیٹی سمیت بعض مخیر حضرات کی جانب سے غریب اورسفیدپوش لوگوں کی عزت نفس کاخیال رکھتے ہوئے متاثرین کے گھروں تک راشن پہنچایامگرلاک ڈاون سے متاثرلوگون کی بڑی تعدادابھی تک کسی بھی پیکج یاامدادسے محروم ھے عوامی اور سماجی حلقوں نے مصیبت اورمشکل کی اس گھڑی میں سیاسی بنیادوں پرراشن اورامدادکی تقسیم پرشدیدردعمل کااظہارکرتے ہوئے اس عمل کو سیاست سے پاک رکھنے اوربلاتفریق غریب اورسفیدپوش لوگوں کی امدادکامطالبہ کیاہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں