سوئی گیس 87

تبدیلی سرکار نے نئے سال کا عوام کو تحفہ

مری تبدیلی سرکار نے نئے سال کا عوام کو تحفہ دے دیا حکومت کی طرف سے گیس کی قیمتوں میں کئی گناہ ہوش ربا اضافے کے بعد نومبر کے گیس بل صارفین پر بم کی شکل میں آگرے گھریلو صارفین کے بل 5 ہزار سے 30 ہزار روپے تک جبکہ ہوٹلوں کا لاکھوں روپے کابل آنے سے انکی چیخیں نکل آئیں تبدیلی سرکار کی طرف سے گیس کی قیمتوں میں کئی گناہ اضافے سے لوگوں سے جینے کا حق بھی چھین لیا ہے سخت سردی انکا واحد سہارا گیس کی سہولت تھی لیکن موسم سرما کے پہلے ماہ کے ابل انہیں یہ پیغام دے گئے کہ اگر آپ گیس ہیٹر کے مزے لینگے تو بدلے میں آپ کو پورے مہینے کاخرچ صرف گیس بل کی ادائیگی کیلئے اد اکرنا ہوگا جبکہ ہوٹلوں میں گیس کے بلوں میں اضافے سے روٹی اور ریسٹورنٹ کے ریٹ بھی بڑھ گئے گیس کے اضافی بلوں کا سارا بوجھ سر و تفریح کے لیے آنے والے سیاحوں اور مقامی لوگوں پر پڑتا ہے ہوٹل مالکان بھی اس مسئلے میں کافی پریشان دکھائی دے رہے ہیں وزیراعظم عمران خان کی جانب سے بلندوبالا سیاحت کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے آئے روز عوام کو ایک نیا تحفہ مل جاتا ہے تحریک انصاف کی حکومت عوام کو سہولیات دینے کے بجائے آئے روز ایک نئی مشکلات کھڑی کرتی جارہی ہے اگر اسی طرح کے حالات جلتے رہے تو وہ دن دور نہیں ہیں جب عوام روڈوں پر نکلنے پر مجبور ہو جائے گیس صارفین نے وزیر اعظم اور وفاقی وزیر پٹرولیم سے اس سلسلے میں فوری نوٹس لینے کامطالبہ کیا ہے،،

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں