murree pic 01 172

سی پی او راولپنڈی محمد احسن یونس کا جناح ہال مال روڈ مری میں کھلی کچہری کا انعقاد

مری :سی پی او راولپنڈی محمد احسن یونس کا جناح ہال مال روڈ مری میں کھلی کچہری کا انعقاد، کھلی کچہری میں شہریوں کی کثیر تعداد میں شرکت، شہریوں کے مسائل سن کر موقعہ پر احکامات صادر کیے، تفصیلات کے مطابق سٹی پولیس آفیسر ڈی آئی جی محمد احسن یونس نے جناح ہال مال روڈ مری میں کھلی کچہری کا انعقاد کیا، کھلی کچہری میں ایس ایس پی آپریشنز طارق ولایت، چیف ٹریفک آفیسر محمد بن اشرف، ایس پی صدر رائے مظہر اقبال،اے ایس پی مری عبدالطیف ڈی ایس پی ٹریفک مری،، ایس ایچ او تھانہ مری، متعلقہ پولیس افسران سمیت شہریوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی، اس موقع پر سٹی پولیس آفیسر ڈی آئی جی محمد احسن یونس نے کہا کہ چھٹیوں کے سیزن اور برفباری شروع ہونے سے پہلے آپ سے ملنا چاہتا تھا تاکہ آپ کے مسائل سن کر ان کا سدباب کیا جائے، سی پی او نے کہا کہ اوورل آل شفاف پولیسنگ ہماری پالیسی ہے جس کی پہلی سٹیج سروس ڈیلیوری ہے، پولیس کا شہریوں کے ساتھ رویہ بہتر ہونا چاہیے اور خوش اخلاق ہونا چاہیے، سیاحو ں اور مقامی لوگوں کے ساتھ یکساں رویہ رکھیں، سی پی او نے کہا کہ مری میں جتنا امن و امان ہوگااتنے ہی سیاح زیادہ آئیں گے، کھلی کچہری کے دوران شہریوں نے اپنے مسائل بیان کرتے ہوئے کہا کہ تھانے اور چوکیوں میں نفری آبادی کے لحاظ سے کم ہے جبکہ تھانے اور چوکی کی گاڑیاں بھی پرانی اور خراب ہیں، جس پر سی پی او نے کہا کہ مجھے اس کا اندازہ ہے میں دفاتر سے نفری اور گاڑیاں کم کرکے تھانوں میں بھجوارہا ہوں، اس موقع پر سی پی او نے کہا کہ کسی بھی مقامی پولیس اہلکار کو لوکل تھانہ میں تعینات نہ کیا جائے گا جبکہ ٹریفک کے مسائل کو حل کرنے کیلئے چیف ٹریفک آفیسر کو ہدایات جاری کیں،شہریوں نے کہاکہ مری میں منشیات فروشی اور گداگری کے مسائل ہیں اور سیاحوں کے گائیڈز مقامی افراد خودہی بن جاتے ہیں جن کا کوئی سدباب نہ کیا جارہا ہے جس پر سی پی او نے کہا کہ منشیات فروشی کے انسداد کیلئے خصوصی ٹیمیں تشکیل دی جائیں، سی پی او نے کہا کہ مال روڈ مری پر پولیس ریسپانس یونٹ فراہم کرنے کیلئے نظام بنا رہے ہیں تاکہ مال روڈ پر شہریوں کے تحفظ اور سہولت کو یقینی بنایا جا سکے، چوکیوں پر فرنٹ ڈیسک اور کیمرے لگانے کا نظام بھی متعارف کروا رہے ہیں جس سے شہریوں کو سفر کر کے تھانے آنے کی دشواری سے بچایا جا سکے گا، سی پی او نیپرانے تھانے کی بلڈنگ میں فرنٹ ڈیسک بنانے کا بھی بتایا تاکہ شہریوں کو سہولت میسر ہوسکے، شہریوں نے کہاکہ مری میں کریمنل گینگز متحرک ہیں جوکہ فائرنگ اور قبضہ جیسے جرائم میں ملوث ہیں جس پر سی پی او نے ایس پی صدر کو گینگز،قبضہ مافیا اور فائرنگ کرنے والے قانون شکنوں کے خلاف کاروائی کے احکامات صادر کئے،ایک بزرگ شہری نے کہا کہ ایف آئی آر کٹ چکی ہے مگر اس کی کاپی نہ مل رہی ہے جس پر سی پی او نے کھلی کچہری کے دوران ہی بزرگ شہری کو ایف آئی آر کی کاپی فراہم کرنے کا حکم دیا، ایک شہری نے بتایا کہ اسکا والد قتل ہوا جس کے ملزمان ٹریس نہ ہورہے ہیں جس پر سی پی او نے ایس پی صدر کو قتل کے ملزمان کو فوری ٹریس کرکے گرفتار کرنے کا حکم دیا،ایک شہری نے درخواست دی کہ چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کرنے پر لڑائی جھگڑے کے دوران مارا پیٹا گیا جس کی ایف آئی آر درج نہ ہورہی ہے جس پر سی پی او نے کہا کہ میڈیکل رپورٹ آنے کے ایک گھنٹے کے اندر مقدمہ درج کر لیا جائے گا،بدمعاشوں کی فائرنگ اور اس کی سوشل میڈیا کی تشہیر کے متعلق سی پی او نے ایس ڈی پی او مری کو ان کے خلاف آپریشن رد البدمعاش شروع کرنے کے احکامات جاری کیے، اے ایس پی مری کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ روزانہ کی بنیاد پر مری کی چوکیوں میں ایک سے دو گھنٹے شہریوں کے مسائل سنیں گے، سی پی او نے تمام مسائل کے سلسلے میں ایس ڈی پی او مری کو جامع رپورٹ بناکر فوری پیش کرنے کا حکم دیا تاکہ عملی کام کا آغاز کیا جاسکے، آخر میں انجمن تاجران، ہوٹلز ایسوسی ایشن مری اور مری کی عوام نے سی پی او محمد احسن یونس کا شکریہ اداکرتے ہوئے کہا کہ سی پی او راولپنڈی کے اقدامات سے ایسا نظر آرہا ہے کہ پولیس کی کارکردگی او ر تھانہ کلچر میں بہتری ممکن ہوسکے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں