.ڈینگی 55

انتظامیہ کی نا اہلی کی بنا پر کشمیر پوائنٹ کے تلابوں کی لیکج کروڑوں روپے روپے بھی ڈینگی مچھر کی افزائش نہ روک سکے

مری انتظامیہ کی نا اہلی کی بنا پر کشمیر پوائنٹ کے تلابوں کی لیکج کروڑوں روپے روپے بھی ڈینگی مچھر کی افزائش نہ روک سکے ۔تلابوں کی لیکج سے اولڈ برازیل ایمبیسی کے گردو نواح میں آباد مقامی باسیوں اور ملک کے دیگر علاقوں سے مری آنے والے سیاحوں کی زندگیوں پر ڈینگی مچھر اور لینڈ سلائیڈنگ کے خطرات گذشتہ کئی سالوں سے منڈلا رھے ھیں ۔سابق وزیر اعلی پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے تلابوں کی لیکج کنٹرول کرنے کےلیئے ستاون کروڑ روپے کی خطیر رقم قومی خزانے سے تلابوں کے اندر چپس لگانے کےلیئے دی تھی مگر انتظامیہ اور پبلک ہیلتھ میں موجود کالی بھیڑوں کی ملی بھگت سے چیس کی جگہ ماربل لگا کر حکمرانوں کو تو خوش کر دیا گیا مگر مسئلہ جوں کا توں ھے اس لیکج کے حوالے سے تقریباً پانچ سال قبل ایڈمنسٹریٹر مری کو باقاعدہ ایک تحریری درخواست موصول ھوئ جسمیں مقامی آبادی کے سروں پر منڈلانے والے خطرات اور لیکج سے متوقع نقصان کے بارے میں آگاہ کیا گیا جس پر اسوقت کے ایڈمنسٹریٹر مری طاھر فاروق نے رپورٹ طلب کر کے نالے پختہ کروانے کے احکامات جاری کرنے کی پریکٹس بھی کی مگر وہ درخواست ابھی تک ایڈمنسٹریٹر مری کے ٹیبل پر انتظار میں ھے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں