Police murree 75

مری پولیس اب صرف فوٹو سیشن تک محدود ہوچکی

مری پولیس اب صرف فوٹو سیشن تک محدود ہوچکی مری کے مختلف علاقوں میں چوروں ڈکیتوں اور منشیات فروشوں کو کھلی چھٹی جرائم میں اضافہ کا سبب بن رہی ہے ایس ایچ او مری بھی بڑھتے ہوئے جرائم پر قابو پانے میں ناکام ہے مری میں آٹھ پولیس چوکیوں میں تعینات اہلکار عوام کو انصاف فراہم کرنے کے بجائے مک مکا کے اڈے بن چکے ہیں افسران کو سب اچھا کی رپورٹیں ،سب کچھ مخصوص اہلکاروں کے کہنے پر ہونے لگے جرائم کی بڑھتی ہوئی شرح پر اہلیان علاقہ شدید پریشانی سے دوچار ہیں پولیس چوکیاں بھی مبینہ طور منشیات فروشوں کی سرپرستی کرتی محسوس ہوتی ہیں ،دیہی علاقوں کے عوام نے شام ہونے کے بعد گھروں سے نکلنا بھی بندکردیا ہے جبکہ اے ایس پی اور ایس ایچ او مری کی کاروائیاں صرف کاغذوں تک ہی محدود ہیں ،ذرائع کے مطابق غریب لوگوں کو مبینہ طور پر مختلف چوکیوں میں بلواکر نذرانے وصول کرنا معمول بن چکا ہے ،اہلیان علاقہ کے مطابق مری پولیس کی کارکردگی انتہائی مایوس کن ہے اہلیان علاقہ نے اعلیٰ حکام سے فوری نوٹس لینے اور اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں