135

ہیڈکواٹر ہسپتال مری میں جون کے مہینے میں 36163 بیرونی شعبہ مریضاں میں علاج معالجہ

مری تحصیل ہیڈکواٹر ہسپتال مری میں جون کے مہینے میں 36163 بیرونی شعبہ مریضاں میں علاج معالجہ کیاگیا مذکورہ تعداد صرف ان مریضوں کی ہے جو اوپی ڈی میں صحت کی سہولیات سے مستفید ہوئے مری کی تاریخ میں ٹی ایچ کیوہسپتال مری کو اتنی بڑی تعدا دمیں مریضوں کے علاج کا اعزاز حاصل ہوا ہے ان خیالات کا اظہار میڈیکل سپریٹنڈنٹ ٹی ایچ کیوہسپتال مری ڈاکٹرفائزہ کنول نے میڈیا سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ اللہ پاک کے کرم سے ہسپتال میں مریضوں کو بہترین طبی سہولیات اور مفت ادویات حکومت کی جانب سے فراہم کی گئی اور کی جارہی ہیں جو اس بات کی عکاسی کرتا ہے کہ اہلیان مری کا اعتماد اب اس ادارے پر بحال ہوچکا ہے ہسپتال کی خوبصورت بلڈنگ اور حالات کے مطابق بہترین سہولیات فراہم کرنے ادارہ بن چکا ہے لوگوں کی بڑی تعداد نے ٹی ایچ کیوہسپتال مری میں فراہم ہونے والی مریضوں کو سہولیات پر اطمینان کا اظہار کیا اور کہا ہے کہ اس حکومت کے آنے کے بعد اس ادارے نے ڈاکٹرفائزہ کنول کی دن رات کی کوششوں سے بہت ترقی کی ہے اور اب مریض بھی صحت کی بہترین سہولیات سے مستفید ہورہے ہیں عوام کا کہنا ہے کہ ابھی اس میں مزیدبہتری اور سہولیات فراہم کرنے کی ضرورت ہے جن میں ماہر سرجنز اورشعبہ امراض قلب اور دیگر اہم شعبوں کے فوری فرال ہونے کی بہت ضرورت ہے ڈاکٹرز کیلئے رہائشوں اورپیرامیڈیکل سٹاف کیلئے بھی رہائشوں کی اشد ضرورت ہے جو انتہائی اہم مسئلہ ہے جو عرصہ دراز سے چلاآرہا ہے جسے حل کئے بنا مری میں کوئی بھی سپیشلسٹ ڈاکٹر اور سرجن آنے کوتیار نہیں ہوتے جسکی وجہ سے مختلف حادثات میں شدید زخمی ہونے والوں کو راولپنڈی بھیج دیاجاتا ہے جو کبھی پہنچ جاتے ہیں یاراستے میں ہی زندگی کی بازی ہارجاتے ہیں اس سلسلے میں پی ٹی آئی کے صحت کوآڈینٹر سہیل عرفان عباسی کا کہنا ہے کہ ان مشکلات کا ہمیں علم ہے اور اس بارے میں مختلف آپشنز پر کام کیاجارہا ہے اور انشاء اللہ بہت جلدان مسائل پر بھی قابو پالیاجائیگا لیکن اب مری ٹی ایچ کیوہسپتال وسائل کی کمی کے باوجود جدید طبی سہولیات فراہم کرنے میں کوشاں ہے کچھ عرصہ قبل صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے بھی مری کے ہسپتال کا دورہ کیا تھا اوروارڈز میں جاکرمریضوں سے بھی انہوں نے سہولیات کے بارے میں معلومات حاصل کی تھیں بعد از اں صوبائی وزیر نے ایم ایس ڈاکٹر فائزہ کنول کی مری ہسپتال کیلئے کی گئیں خدمات پر انکو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ مری کیلئے آپ جو بھی ڈیمانڈ کرینگیں آپ کو فراہم کیاجائیگا منسٹر ہیلتھ نے کہا کہ ہم صحت کیلئے حکومت کے ویثرن کو آگے لیکر چل رہے ہیں فنڈز میں کمی کے باوجودہم مری پر بہت فوکس کررہے ہیں کیونکہ یہ ایک بین الاقوامی سیاحتی مقام ہے اور یہاں صحت کی سہولیات فراہم کرنا ہمارے لئے سب سے زیادہ اہم اس لئے ہم مری پر خصوصی توجہ دے رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں