31

مری و گلیات سانحہ گزرے ایک ہفتہ گزرچکا ہے مگرگلیات کے لنک روڈز تاحال بحال نہ ہوسکے

مری و گلیات سانحہ گزرے ایک ہفتہ گزرچکا ہے مگرگلیات کے لنک روڈز تاحال بحال نہ ہوسکے،مقامی لوگ تاحال گھروں میں محصور ہیں چھوٹے بازاروں کی دوکانیں راشن نہ پہنچنے کی وجہ سے مکمل بند پڑی ہیں،منہاج ویلفیئر فاونڈیشن مری و گلیات ٹاسک فورس کے سربراہ امتیاز احمد علوی نے اiپنے بیان کہاہیکہ منہاج ویلفیئر فاونڈیشن نے پہلے دن سے اس سانحہ کے متاثرین کی بحالی کیلئے امدادی کام شروع کردیاتھا، منہاج ویلفیئرفاؤنڈیشن کی طرف سے 10 فون نمبرز وائرل کئے گئے جنہوں نے ہیلپ لائنز کے طور پر کام کیا،پہلے تین دنوں میں 500 سے ذاہد کالز موصول ہوئیں اور متعلقہ خاندانوں کو ممکن مدد فراہم کی گئی جبکہ سیاحوں کی برف میں دھنسی گاڑیوں کو نکالنے کیلئے 4بائی 4 کی جیپوں کے زریعے نکالاگیاان کاموں کی نگرانی منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن کے رضاکار شکیل الرحمن کی سربراہی ٹیم نے بھرپور کردار ادا کیاسارے کام کی کوآرڈینیشن اور دیگر فلاحی تنظیمات سے کوآرڈینیشن کا کام امجد ارباب عباسی نے بھرپور ادا کیا،فیلڈ ورک میں مصطفوی سٹوڈنٹس موومنٹ کی ٹیم نے صدر احمد محی الدین کی سربراہی میں رضاکارانہ طور پر بھرپور کردار ادا کیا،امتیاز احمد علوی نے میڈیا کو تازہ ترین صورتحال سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ اس وقت بھی گلیات کے لنک روڈز بحال نہ ہونے کیوجہ سے لوگ فاقہ کشی پر مجبور ہورہے ہیں اور راشن کی ترسیل کو یقینی بنانا انتظامیہ کی بنیادی ذمہ داری ہے تاہم منہاج ویلفیئر فاونڈیشن اپنی مدد آپ کے تحت ممکن حد تک راشن کی ترسیل کو یقینی بنائیگی اس سلسلے میں 100 مستحقین کی دہلیز پر راشن پہنچایا جائیگا۔

Print Friendly, PDF & Email