murree Banks 150

مری میں بینکوں سے پنشن لینا عذاب بن گیا

مری میں بینکوں سے پنشن لینا عذاب بن گیا خواتین بینکوں کے باہر لمبی لائنوں میں باری کا انتظار کرنے لگے تفصیلات کے مطابق مری اسٹیٹ بنک کی ہدایات پر عملدرآمد نہ ہونے پر مختلتف بنکوں کے باہر عوام الناس کو اذیت کا سامنا۔نہ انتظار گاہ۔نہ پینےکے پانی کی سہولت۔نہ واش رومز۔اور نہ ہی بزرگ شہریوں اور خواتین کی عزت نفس کا خیال رکھا جانے لگا۔ بینکوں کے اندر اور باہر پنشنوں کے لئے کوئی مناسب جگہ نہیں ہے جس کے باعث خواتین بینک کے باہر سخت موسم میں کھڑی ہیں.جبکہ بنک مینیجرز کی جانب سے کہنا ہے کرونا ایس او پیز کے باعث چار افراد کو بنک کے اندر جانے کی اجازت ہے لیکن پنشنر کے لیے بنک کے باہر بیٹھنے کے انتظامات موجود نہیں ہیں پنشنر کے ساتھ بیرون ممالک سے آنے والی رقم وصول شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے سارا سارا دن بینکوں کی لائنوں میں لگے رہنے کے بعد بینک کی ٹائمنگ ختم ہونے کے باعث مایوس گھر لوٹنے پر مجبور موجودہ حکومت پنشن کے حصول کے لیے اچھے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے جدید دور میں خواتین پینشنر بنکوں کے دھکے کھانے پر مجبور اسٹیٹ بینک آف پاکستان حکومت کو مری میں بینکوں کے ناروا سلوک پر سخت ایکشن لینے کا مطالبہ