Land records 128

لینڈ معافیہ متحرک مسیاڑی اور نمبل کا لینڈ ریکارڈ شفٹ کر دیا گیا عوام سراپا احتجاج

مری یونین کونسل مسیاڑی اور نمبل کی عوام کا اراضی ریکارڈ شفٹ کرنا انتہائی ظُلم ہے عوامی حلقوں میں سخت تشویس اور غم و غصہ دکھائی دینے لگا پٹواریوں پر چلنے والوں نے عوام کے ساتھ تاریخ ساز زیادتی کا ورک مکمل کر لیا ذرائع کے مطابق مری کی یونین کونسلز مسیاڑی اور نمبل کا لینڈ ریکارڈ سے متعلقہ معاملات کو نیو مری شفٹ کر دیا گیا پہلے ہی مری میں عوام کو ذلیل و خوار کیا جاتا تھا اور اب نیو مری جو کہ میلوں مسافت کے بعد جہاں عوام کی رسائی کسی طور ممکن نہیں وہاں زمین کے معاملات کو شفٹ کر دیا گیا ایک تحصیل دو لینڈ ریکارڈ سینٹر ریکارڈ نیو مری شفٹ کرنا کسی طور بھی انتظامیہ اور محمکہ ریونیو کا مناسب اقدام نہ ہے عوامی حلقے
بدھ کے دن زمین کے معاملات کے لیئے لینڈ ریکارڈ سینٹر مری جانے والے یونین کونسل نمبل ، مسیاڑی ، انگوری کے افراد کو نیو مری نئے لینڈ ریکارڈ سینٹر جانے کا کہا جاتا رہا جس پر سائلین میں سخت غم و غصہ دکھائی دیتا رہا سینکڑوں افراد نے اس حوالہ سے ڈپٹی کمشنر راولپنڈی کے پاس جانے کا فیصلہ کیا ہے تا کہ اسے فیصلے کو فوری طور پر کالعدم قرار دلوایا جا سکے سائلین کی مشکلات حل کرنے کے بجاۓ اضافہ کرنے والے اقدامات کو روکا جائے عوامی حلقے جبکہ دوسری طرف مری کی عوام نے مطالبہ کیا ہے کہ پٹواری بادشاہوں کو لینڈ ریکارڈ سینٹر میں پابندی سے ڈیوٹی دینے کا پابند بنایا جاۓ کیونکہ زمین کے معاملات کے لیے لینڈ ریکارڈ سنٹر سے کاغذات کی درستگی اور ان کے حصول کے لیے پٹواری بادشاہوں کو ڈھونڈنا عام آدمی کے بس کا کام نہیں جبکہ یہی پٹواری بادشاہ بااثر افراد کے پیچھے زمینی کاغذات کے بستے اٹھاۓ راولپنڈی اسلام اور اس کے گردونواح کے مضافات میں مرغن دسترخوانوں پر مزے اڑانے کے بعد وہاں پر بڑی بڑی ڈیلیں جن میں شاملاتی زمینوں کے سابقہ تاریخوں میں انتقالات ، جنگلات کی زمینوں کو ہوائی حقوق لگا
کر فروخت کرنا وغیرہ کی داستانیں شامل ہیں ذرائع
اسی کے ساتھ ساتھ سادہ لوح اور بیرون ممالک اور دوسرے شہروں میں آباد لوگوں کو ملکیتی و شاملاتی اراضیوں سے محروم کرتے یی پٹواری نظر آتے ہیں موجودہ دور میں سرکاری افسران کی جگہ پی ٹی آئی کے ورکر اداروں پہ اپنا راج کرتے دکھائی دیتے ہیں اور انتظامیہ بے بس نظر آ رہی ہے اکثر اس حوالہ سے ان کے حواری نئی لگژری گاڑیاں اور محل نما گھر بنا چکے ہیں پٹواریوں اور محکمہ ریونیو کی دو نمبریوں میں دیگر کئی اور شعبوں کے افراد سے بھی ان کے مضبوط مراسم کی اطلاعات بھی ذرائع دیتے ہیں