Public Health 57

مری پبلک ہیلتھ کی نااہلی صاف پانی کشمیر پوائنٹ کے تلابوں کے بعد جگہ جگہ سے ندی نالوں کی

مری:کشمیر پوائنٹ کے تلابوں کے بعد پانی سپلائی کے پائپس بھی جگہ جگہ سے لیک ہونے لگی۔عرصہ دراز سے ایڈمنسٹریٹر مری کے ٹیبل پر پڑی نکاسی آب کے نالوں کی درخواست پر عمل درآمد نہ ہو سکا۔پبلک ہیلتھ مری کی نااہلی کے باعث ایک طرف جہاں مری کی عوام پانی کی بوند بوند کو ترستی ہے۔اور دوسری طرف کامرس کالج روڈ پر چار انچ قطر کی پائپ لائن سے پانی لیکج کے باعث پانی نالیوں میں ضائع ہو کر پبلک ہیلتھ مری کی کارکردگی کا پول کھول رہا ہے پبلک ہیلتھ کی کی ان نااہلیوں پر اضافی بلوں کا بوجھ صارفین کے بلوں میں ڈالا جاتا ھے۔جس بنا پر مری کے مقامی باسیوں سمیت کاروباری طبقے کی چیخیں نکلتی ہیں۔یاد رہے کہ ایسے مناظر مری شہر کے مختلف علاقوں سے اکثر میڈیا سوشل میڈیا کی زینت بن رہی ہیں مگر مجال کہ کسی کہ کانوں پر جوں تک رینگتی ہوں۔پہلے کشمیر پوائنٹ کے تلابوں سے ہونے والی لیکج کو عرصہ دراز سے نہ بند کیا جا سکا نہ اسسٹنٹ کمشنر مری کے ٹیبل پر منظور شدہ اسی پانی کی نکاسی کے لیئے نالوں کو پختہ کرنے کی کوشش پبلک ہیلتھ کے ذمہداران نے کی جس بنا پر لوگوں کی قیمتی املاک اور جائیدایں بھی لینڈ سلائیڈنگ کے خطرے میں ہیں۔