Water drop drop 18

تحصیل بھر اور مری شہر میں پانی کا بحران،،،

مری:طویل خشک سالی اور ماضی کے برعکس انتہائی کم برفباری ہونے سے تحصیل بھر اور مری شہر میں پانی کا بحران پیداہوسکتا ہے جبکہ میونسپل آفیسر انفراسٹکچرجو جوائنٹ واٹر بورڈ مری جیسے اہم ادارے کا سیکرٹری بھی ہے کی عدم تعیناتی کے باعث پانی کابحران شدت اختیارکرسکتا ہے جبکہ دیگر ترقیاتی کام بھی رک سکتے ہیں عوام کے مطالبے پر چھ ماہ بعد ایک آفیسر کو ایم آئی اوتعینات کیاگیا تھا لیکن 27 دنوں کے بعد انکو مری سے تبدیل کردیاگیا لیکن تاحال کسی کی اس پوسٹ پر تعیناتی نہ کی جاسکی ہے جس سے میونسپل کمیٹی مری جس کوباخبرذرائع کے مطابق پھر میونسپل کارپوریشن کا درجہ دیاجارہا ہے شدید معاشی بحران اورمسائل سے دوچار ہوسکتی ہے موسم بہار شروع ہونے کو ہے جس کے بعدگرمائی سیزن شروع ہوجائیگا اس دوران اگر پانی کابحران شدت اختیارکرجاتا ہے تو اس سے مری کی سیاحت پر انتہائی منفی اثرات مرتب ہونگے عوامی حلقوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب،کمشنر اور ڈپٹی کمشنر راولپنڈی سے مطالبہ کیا ہے کہ مری کی سیاحتی اہمیت کے پیش نظر فوری طور پر یہاں میونسپل آفیسر انفراسٹکچر کی تعیناتی کی جائے تاکہ پانی کی قلت اور دیگر مسائل سے بچاجاسکے۔