Forests 19

مری کے جنگلات سے قیمتی لکڑی سمگل

مری کے جنگلات سے سمگل ہونے والی لاکھوں روپے مالیت کی کیل کی قیمتی لکڑی سے بھری ٹیوٹاہائی ایس وین مخبر کی اطلاع پر پکڑ ی گئی ڈرائیور سمیت ایک ملزم گرفتار جبکہ ٹمبر مافیا کا سرغنہ جنگل میں فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا، ملزمان کو مری پولیس نے بمہ لکڑی اور ٹیوٹاہائی ایس تھانہ میں بند کر دیا ہے مری اور گلیات کہ بایاب جنگلات سے لکڑی کاٹ کر راولپنڈی اسلام آباد کیلئے مسافر وین سفید ٹیوٹاہائی ایس نمبر LwK 0951کے ذریعے لے جایا جارہا تھا کہ مخبر کی اطلاع پر محکمہ فارسٹ کے اہلکاروں محمد راویز فارسٹر، شمیم خان فارسٹ گارڈ، فیصل آفتاب، حمید اور مری پولیس نے گھڑیال کے مقام پر گاڑی کو روکا تو تلاشی کے دوران ہزاروں فٹ لکڑی برآمد کی پولیس نے ڈرائیور عباسی ساکن اوسیا، اویس ساکن سنیوہ کو گرفتار کر لیا جبکہ ٹمبر مافیا کا سرغنہ محمد کلیم ساکن بانڈی اور اسکا ساتھی اسرار ساکن بانڈی موقع سے جنگل میں فرار ہوگئے مری پولیسں نے محکمہ جنگلات کی درخواست پر مقدمہ درج کرلیا ہے، مذکورہ ٹمبر مافیاکے سرغنہ محمد کلیم اور ساتھیوں کے خلاف مختلف تھانوں میں ڈیڑھ درجن کہ قریب مقدمات درج ہیں اور یہ ٹمبر مافیا لکڑی مری و گلیات کہ جنگلات سے کاٹ کر مختلف شہروں میں سمگل کرتا ہے عوامی حلقوں کا ٹمبر مافیا اور محکمہ جنگلات میں موجود کالی بھیڑوں کے خلاف سخت قانونی اورمحکمانہ کاروائی کا مطالبہ کیا ہے دوسری جانب جب اس سلسلہ میں محکمہ جنگلات سے رابطہ کیا گیا تو انکا کہنا تھا کہ لکڑی مری اور گلیات سے کاٹ کر بانڈی کے مقام پر اکٹھی کی گئیں اور وہاں پر مسافر وین کی سیٹیں نکال کرلوڈ کی گئی لیکن لکڑی منزل تک پہنچنے سے پہلے ہی پکڑی گئی انتہائی معتبر ذرائع کے مطابق اس سے قبل محکمہ جنگلات کے اہلکاروں کی ملی بھگت سے متعدد گاڑیوں کے ذریعے ہزاروں فٹ لکڑی سمگل کی جا چکی ہے۔