Collision 32

سالگراں میں دو ٹیوٹا مسافر وین میں تصادم 10 افراد زخمی ذمہ دار کون

مری (ثاقب عباسی سے)سالگراں میں دو ٹیوٹا مسافر وین میں تصادم 10 افراد زخمی ذمہ دار کون روڈ ایکسیڈنٹ پر متعلقہ اداروں کی خاموشی ایک سوالیہ نشان ہے تفصیل کے مطابق سالگراں کے نزدیک بکوٹ سے راوالپنڈی اور راوالپنڈی سے نیو مری جانے والی دو ٹیوٹا مسافر وین تیز رفتاری کے باعث آمنے سامنے ٹکرا گئیں اور دس افراد شدید زخمی ہوگئے جبکہ کوئی جانی نقصان نا ہوا آئے روز مری جی ٹی روڈ اور ایکسپریس وے روڈ پر ایکسیڈنٹ کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے درجنوں اموات روڈ ایکسیڈنٹ کی وجہ سے ہو چکی ہیں اور درجنوں معذور بھی ہو چکے ہیں گزشتہ ایک ہفتے میں ایکسپریس وے اور جی ٹی روڈ پر تین حادثات ہوئے گزشتہ سالوں میں بانسراگلی کے مقام پر ٹریفک وارڈنز پبلک ٹرانسپورٹرز کو بانسراگلی سے سالگراں تک 30 سے 45 منٹ کے ٹائم کی پرچی دیتے تھے جو سالگراں کے مقام پر ٹریفک وارڈنز ٹائم چیک کیا کرتے تھے مگر نامعلوم وجوہات کی وجہ سے ایسا ختم کر دیا گیا ہے جس کی وجہ سے روڈ ایکسیڈنٹ میں اضافہ ہوا ہے روڈ ایکسیڈنٹ پر متعلقہ اداروں کی خاموشی ایک سوالیہ نشان ہے روڈ ایکسیڈنٹ کا ذمہ دار کون ہے ان اموات کا ذمہ دار کون ہے ؟کیا متعلقہ ادارے روڈ ایکسیڈنٹ کی روک تھام کے لیے کوئی عملی ٹھوس اقدامات اٹھا سکیں گے یا ان روڈ ایکسیڈنٹ کی تعداد میں مزید اضافہ ھوگا
متعلقہ اداروں کو قواعد و ضوابط پر سختی سے عملی اقدامات اٹھانے چاہیے
جب تک تمام اہل علاقہ اس اہم اور احساس ایشو پر سنجیدگی سے غور نہیں کریں گے اس کے لیے ٹھوس عملی اقدامات نہیں اٹھائیں گے اس وقت تک روڈ ایکسیڈنٹ کی تعداد میں اضافہ ہوتا رہے گا قانون نافذ کرنے والے اداروں اور نو تعینات چیف ٹریفک آفیسر راوالپنڈی راۓ مظہر اقبال سے نوٹس کی اپیل کہ فوری طور پر بانسراگلی سے سالگراں کے مقام پر پرانا سسٹم بحال کیا جاۓ اور تمام ٹریفک وارڈنز کو اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے کی ہدایت جاری کریں اور قانون پر سختی سے عمل درآمد کروایا جاۓ