Walk murree 14

پاکستان اور بھارت کے مابین کشیدگی کے مستقل خاتمہ کیلئے مسئلہ کشمیر کا منصفانہ اور پرامن حل ضروری

                       مری:جنوبی ایشیاء کے خطے میں پائیدار امن، پاکستان اور بھارت کے مابین کشیدگی کے مستقل خاتمہ کیلئے مسئلہ کشمیر کا منصفانہ اور پرامن حل ضروری جو کشمیری عوام کی امنگوں اور اقوام متحدہ کے طے کردہ چارٹرز کے مطابق، ہو  بدقسمتی یہ کہ عالمی طاقتیں بشمول اقوام متحدہ اس کے حل میں سنجیدہ نہیں. ان خیالات کا اظہارِ آئینز ایجوکیشن فاونڈیشن کے چیئرمین نعیم اشرف نے گزشتہ روز مری میں کشمیری عوام سے اظہار یک جہتی کے لیے فاونڈیشن کے زیر اہتمام امن واک سے خطاب کے دوران کیا. واک میں اساتذ?، طلبا و طالبات اور ہر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے شرکت کی انکا کہنا تھا کہ گذشتہ دنیا بھر میں مسلمانوں مظلوم اور بھارت اور اسرائیل جیسے ممالک مسلمانوں کے خون سے ہولی کھیل رہے ہیں مگر اس کے باوجود عالمی برادری کا ضمیر مردہ اور انسانی حقوق کے علمبردار خاموش ہیں  مقبوضہ کشمیر اور فلسطین کے مسلمان ظالموں کے لیے مشق ستم بنے ہوئے ہیں. ان کو خطہ میں بہتا انسانی خون کیوں نظر نہیں آتا. انصاف کے ان دوہرے معیارات نے انتہا پسندی کو جنم  اور عالمی اداروں سے وابستہ توقعات کو ختم کیا. نعیم اشرف نے کہا کہ کشمیر کے مسئلے نے ڈیڑھ ارب سے زائد انسانوں کی زندگیاں داو پہ لگا دیں ہیں. دونوں ایٹمی قوت کے حامل ممالک ہیں. بھارت آیے روز لاین آف کنٹرول پہ گولہ باری اور بے گناہ شہریوں کو نشانہ بنا رہا ہے جبکہ مقبوضہ وادی عملا اس وقت دنیا کی سب سے بڑی جیل بن چکی. اس کے باوجود بھارت پہ پابندی نہ لگنا اور اسے انصاف کی فراہمی پہ مجبور نہ کرنا سمجھ سے بالا تر ہے مغرب اور عالمی برادری کے دوہرے معیار کا پردہ چاک ہو چکا اب مسلم ممالک کو اپنا ٹھوس لائحہ عمل طے کرنا ہو گا۔