57

مری شہر میں غیر قانونی اور بے ہنگم تعمیرات سے مختلف مقامات پر خطرناک لینڈسلائیڈنگ

مری سہر میں غیر قانونی اور بے ہنگم تعمیرات سے مختلف مقامات پر خطرناک لینڈسلائیڈنگ کا سلسلہ چل پڑا دن رات کنکریٹ کے پہاڑ کھڑے کئے جانے کا سلسلہ تیزی سے جاری ہے برفباری کے سیزن میں بھی کثیرلمنزالہ پلازوں کی تعمیرات کیلئے بڑے پیمانے پر ہیوی مشینری کے ذریعے کھدائی کاسلسلہ بندنہ ہوسکا شہر کے چاروں اطراف کنکریٹ کے پہاڑ کھڑے کئے جارہے ہیں جبکہ متعلقہ ادارے خاموش تماشائی بن گئے ہیں گذشتہ دو سالوں میں غیر قانونی تعمیرات نے سابقہ تمام ریکارڈ توڑدئیے تعمیراتی مافیاء نے میونسپل کمیٹی کے اہلکاروں کی مدد سے ملکہ کوہسار کا حلیہ بگاڑ کر رکھ دیا ہے گذشتہ روز اپرجھیکاگلی روڈ پر ایک بڑے پلازے کی تعمیر کیلئے کی جانے والی کھدائی سے سڑک کابڑا حصہ لینڈ سلائیڈنگ کی زدمیں آگیا ہے جس سے جانی نقصان کو بھی اندیشہ بڑھ گیا ہے مری کے مختلف مقامات پر ہیوی مشینری کے ذریعے ہونے والی کھدائی کو اگر نہ روکاگیا تو بڑی لینڈسلائیڈنگ کا خطرہ بڑھ جائیگا اس سلسلے میں عوامی اور سماجی تنظیموں نے سپریم کورٹ اور دیگر اعلیٰ حکام سے فوری نوٹس لینے کامطالبہ کیا ہے۔