Dunga Gali 235

ڈونگا گلی پانی سپلائی اسکیم کا حقیقی مالک کون ؟

مری:مصدقہ ذرائع کے مطابق ملکہ کوہسار مری کیلئے ڈونگاگلی میں پانی سپلائی سکیم 1890 میں صرف مری آرمی کیلئے بنائی گئی تھی جبکہ ڈونگا گلی تا مری کی یہ پائپ لائن مری آرمی کی ہی ملکیت تھی،1931 میں میونسپل کمیٹی اس کی شیئرہولڈر بنی اور1931 میں ہی جوائنٹ واٹر بورڈ مری کا قیام عمل میں لایاگیا1931 سے اب تک یہ تمام پائپ لائن اوراراضی جوائنٹ واٹربورڈ مری کی ملکیت ہے تمام ٹریک کے علاوہ 311 ایکڑ رقبہ بھی ڈونگاگلی کے مقام پرجوائنٹ واٹر بورڈ کی ملکیت ہے جس کے تمام ملکیتی کاغذات بھی انکے ریکارڈ میں موجودہیں اب محکمہ وائلڈلائف کے پی کے اورجی ڈی اے نے ہماری ٹنل جہاں سے پانی کی پائپ لائنیں گزررہی ہیں کو وائلڈلائف نے صفائی کی اوروائلڈلائف کے پی کے اپنی پراپرٹی ظاہرکررہا ہے جو غیر قانونی ہے جبکہ مذکورہ تمام پراپرٹی جوائنٹ واٹربورڈ مری کی ملکیت ہے اگر محکمہ وائلڈلائف کے پی کے اورجی ڈی اے نے اس پر قبضہ کیاتو اس سے مری آرمی اور سول آبادی کو پانی کی فراہمی بندہوجائیگی اور اس اہم ترین پانی کی پائپ لائنوں کی حفاظت ناممکن ہوجائیگی اس سلسلے میں ضروری ہے کہ غیر قانونی قبضے کو فوری روکاجائے تاکہ