80

جرگہ برائے مری مال روڈ ٹو

آج یونین کونسل چارہان کے مقام ڈنہ پر مری مال روڈ ٹوکے مسئلے پر ایک جرگہ کا اہتمام کیا گیا جس میں ایم این اے صداقت علی عباسی کو بطور مہمان مدعو کیا گیا ۔

جرگے میں نئی مال روڈکے حوالے سے مقامی لوگوں کے تحفظات سنے گئے ۔

صداقت علی عباسی نے اپنے خطاب میں کہا کچھ لوگوں نے اس منصوبے کو سیاسی بنایا اور اس کے بارے میں غلط شکوک و شبہات پیدا کیے ۔

پی ٹی آئی حکومت عوامی فلاح کے مخالف کبھی کوئی منصوبہ نہ لائے گی اور نہ ہونے دے گی ۔اس سلسلے میں تمام غلط فہمیاں سیاسی بنیاد پر جان بوجھ کر پیدا کی گئی ۔

کچھ لوگوں کے سیاست صرف اور صرف جھوٹ، تنگ نظری اور افواہ سازی پر مبنی ہوتی ہے اور وہ ہر اچھے کام میں بلاوجہ کےروڑےاٹکاتے رہتے ہیں۔

صداقت علی عباسی نے مجوزہ منصوبے کے خدوخال تفصیل سے بیان کیے اور اس سلسلے میں تمام افواہوں کو رد کردیا ۔

افواہ سازوں نے میری سیاسی مخالفت اس حد تک گئی کہ اس خطے کا گیم چینجر منصوبہ کوہسار یونیورسٹی بھی ان کی تنگ نظری سے نہ بچ سکا ۔کوئی ذی شعور آدمی یہ بات تسلیم نہیں کر سکتا ایک علاقے کی سیاسی شخصیات کوہسار یونیورسٹی جیسے بڑے تعلیمی ادارے کی مخالفت میں اجلاس بلائیں گے لوگوں کو اس کے خلاف ورغلایں گے اور عدالت سے اس کو روکنے کے لیے درخواست بازی اور سٹے لینے کی کوشش کریں گے ۔

میں وقت آنے پر کوہسار یونیورسٹی کے ان دشمنوں کو بےنقاب کروں گا اور مری کے نوجوانوں کو ان کے مستقبل کے ساتھ کھلواڑ کرنے کی کوشش کرنے والوں کو سب کے سامنے لاوں گا ۔

صداقت علی عباسی نے مقامی رہائشیوں کی پانچ رکنی کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا اور آئندہ آنے والے تمام مراحل اس کمیٹی کی مشاورت سے طے کرنے کا فیصلہ کیا ۔

مقامی عمائدین نے ایم این اے کے تعاون کا شکریہ ادا کیا،اور اجتماعی طور پر دانشمندی اور سیاسی بالغ نظری سے مقامی لوگوں کے تحفظات دور کرنے پر ان کو خراج تحسین پیش کیا۔

آخر میں تمام شرکاء نے اجتماعی دعا خیر کی آئندہ تمام مراحل مشاورت اور اتفاق رائے کے ساتھ حل کرنے پر اتفاق کیا۔