Murree Punjab Food Authority 47

مری پنجاب فوڈ اتھارٹی کاروباری حلقے شدید تنگ

مری پنجاب فوڈ اتھارٹی کی مری میں کارستانیوں سے مری کے کاروباری حلقے شدید تنگ ہیں مال بنانے کیلئے نت نئے طریقے ایجاد کرنے لگے برفباری سے لطف اندوز ہونے کیلئے اور سیر سپاٹے کرنے مری پہنچ جاتے ہیں اور مری کے تاجروں خون چوسنا شروع کردیا ہے میڈیکل کے نام پر تاجروں کوہراساں کیاجاتا ہے عملے کی انشورنس اور میڈیکل سر فیکیٹس بنانے کیلئے عملے کو اپنے راولپنڈی کے دفتر میں طلب کرکے بھاری فیسیں وصول کرتے ہیں جبکہ مری میں سرکاری تحصیل ہیڈکواٹر ہسپتال کے سرٹیکفیٹ کو مانے سے انکاری ہیں جس سے یہاں ریسٹورنٹس،ہوٹلوں اور دیگر کاروبارکرنے والے غریب لوگوں کو راولپنڈی جاکر میڈیکل سرٹیفکیٹ بنانے سے بہت پریشانی کاسامنا ہوتا ہے جبکہ ٹی ایچ کیوہسپتال مری سے سرٹیفکیٹ آسانی سے عام آدمی حاصل کرسکتا ہے،یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ فوڈاتھارٹی والے چکن شاپس والوں کو سواکلو کی مرغی فروخت نہیں کرنے دے رہے ایساکرنے پر انکو جرمانے بھی جاتے ہیں جبکہ 2 یا ڈھائی کلو وزن کی مرغی خریدنا غریب آدمی کے بس سے باہر ہے مری کے کاروباری حلقوں نے کمشنر،ڈپٹی کمشنر راولپنڈی،اسسٹنٹ کمشنر مری اور پنجاب فوڈ اتھارٹی کے اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ اس ادارے کو عوام اور صارفین کی خدمت کرنے کیلئے مختص کیاجائے نہ کہ غریب لوگوں سے پیسے بٹورنے کا ذریعہ بنایاجائے۔