merchants 11

سینکڑوں کی تعداد میں تاجروں کے کارڈ نا بناۓ گئے اور انکو حق راۓ دہی سے محروم

مری ایشیاء کی سب سے بڑی تاجر یونین مرکزی انجمن تاجران مری کے سابق دور میں ووٹ کے اندراج کے نام پر 3 لاکھ 30 ہزار روپے ہڑپ کر گئے جس سے یہ بات عیاں ہو گئی کہ ایشیاء کی سب سے بڑی تاجر تنظیم کے رائے دندگان کے تخفظ اور مفادات کا دفاع کرنے کے بجاۓ جیب تراشی مصروف رہےتفصیل کے مطابق تاجروں کے کارڈ بنانے پر فی کس 200 سے 250 تک وصول کیۓ گئے جبکہ تاجر کارڈ کی اوسطٔ قیمت بقول سابق عہدیداران کے 65 روپے فی کارڈ پر لاگت خرچ آئی ہے واضح رہے کہ 2400 ارکان کی متنازع فہرست کے مطابق تاجروں سے رقم وصول کی گئی جبکہ سینکڑوں کی تعداد میں تاجروں کے کارڈ نا بناۓ گئے اور انکو حق راۓ دہی سے محروم کر دیا گیا ہے حقیقی تاجروں نے اس انجمن جیب تراشاں سے باقی رقوم کی واپسی کا مطالبہ کیا ہے اور مزید کہا کہ اس ڈاکا زنی کا نوٹس لیا جائے اور سابقہ لوٹ مار اور مفادات مافیا کا راستہ روکنے کیلئے ہر سطح پر کوشیش جاری رہے گی عنقریب ایک سابقہ عہدیداران اور کرپشن کے ذمہ دار کا مزید چہرہ بے نقاب کیا جاۓ گا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں