108

مرکزی انجمن تاجران مری کے انتخابات کے خلاف عدالت کی جانب سے حکم امتناعی جاری

مری مرکزی انجمن تاجران مری کے انتخابات کے خلاف عدالت کی جانب سے حکم امتناعی جاری کردیاگیاھےجعلی ووٹوں کے خلاف بعض تاجروں کی جانب سے عدالت سے رجوع
کیاگیاتھاسینئرسول جج کی عدالت نے انجمن تاجران مری کے انتخابات کو شفاف بنانے کیلئے جعلی اوربوگس ووٹوں کاووٹرلسٹ سے اخراج اور حقیقی تاجرجن کی ووٹ لسٹ میں شامل نہیں کیا گیا اور جان بوجھ کر انہیں الیکشن لڑنے سے دور اور حق رائے دھی سے محروم رکھنے کی ایک بڑی سازش کی گئی انکی ووٹ کے اندراج کو یقینی بنانے تک الیکشن روکنے کاحکم دیاھے واضع رھے کہ مرکزی انجمن تاجران کی سابق باڈی جو تین سال کیلئے منتخب کی گئی تھی اس نے غیرقانونی اورغیرآئینی طورپرالیکشن سے روگردانی کرتے ہوئے تین سال کی بجائے چھ سال کا عرصہ گزاردیااوراب اچانک سامنے آنے والی تاجروں کی ووٹرلسٹ میں 600ووٹوں کا اضافہ کردیاگیاھے جس پر سابق صدرمرکزی انجمن تاجران کی جانب سے الیکشن بورڈکوتحریری اعتراضات جمع کرائے گئے جن میں 500سے زائدبوگس ووٹ لسٹ میں شامل کیئے گئے ہیں اوران ووٹوں کی ازسرنو سکروٹنی کرکے لسٹ سے ختم کرنے کی درخواست کی گئی ھے جبکہ سینکڑوں تاجروں کوبھی تک رکنیت کارڈ بھی تقسیم نہیں کیئے گئے ہیں الیکشن میں حصہ لینے والے امیدواروں کی اکثریت نے مرکزی انجمن تاجران مری کے الیکشن کو شفاف بنانے کیلئے جعلی ووٹوں کوختم کرکے ون شٹر ون ووٹ کے فارمولے کے تحت غیرجانبدارکمیشن یاکمیٹی کے ذریعے نئی ووٹرلسٹ مرتب کرنے کامطالبہ کیاھے۔۔۔