cpo rewalpindi 10

مری انچارج چوکی تریٹ کا شہری پر تشدد،،،

مری انچارج چوکی تریٹ کا شہری پر تشدد کے حوالے سے سوشل میڈیا پر ویڈیو سامنے آنے کا معاملہ، ابتدائی انکوائری افسران نے رپورٹ پیش کر دی،شہری پر پولیس کی طرف سے کسی قسم کا تشدد ہونا نہ پایا گیا،سی پی او راولپنڈی محمد احسن یونس نے اے ایس پی مری اور ڈی ایس پی کوٹلی ستیاں کو 12گھنٹے میں انکواِئری کیے جانے کے احکامات جاری کیے تھے۔تفصیلات کے مطابق مری انچارج چوکی تریٹ کا شہری پر تشدد کے حوالے سے سوشل میڈیا پر ویڈیو سامنے آنے پر سی پی او راولپنڈی محمد احسن یونس نے اے ایس پی مری اور ڈی ایس پی کوٹلی ستیاں کو 12گھنٹے میں انکواِئری کر کے رپورٹ پیش کرنے کے احکامات جاری کیے تھے، ابتدائی انکوائری افسران نے رپورٹ پیش کر دی، رپورٹ کے مطابق شہری پر پولیس کی طرف سے کسی قسم کا تشدد ہونا نہ پایا گیا، دونوں فریقین کے مابین دو روز قبل ترمنہ کے مقام پر لڑائی جھگڑا ہوا، مقامی پولیس 15کی کال پرفوری ریسپانس کرتے ہوئے موقعہ پر پہنچی اور زخمی افراد کو پولیس چوکی پر منتقل کیا گیا،دونوں فریقین کی درخواستوں پر ان کے میڈیکل کروائے گئے، میڈیکل ابھی ڈیکلئیر نہ ہوئے ہیں، میڈیکل رپورٹس موصول ہونے پرحسب ضابطہ کاروائی عمل میں لائی جائیگی،میڈیکل کے دوران بھی زخمی نے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ یا سٹاف کو پولیس تشدد کے بارے میں آگاہ نہ کیا،شفافیت کو یقینی بنانے کے لیے انچارج چوکی تریٹ ظفر الحق ایس آئی کو تبدیل لائن کر دیا گیا، معاملہ کی مزید تحقیقات جاری ہے،ایس پی صدر ضیاء الدین احمد کاکہنا تھا کہ قانون کی بالادستی اور انصاف کی فراہمی کے لیے راولپنڈی پولیس ہمہ وقت کوشاں ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں