Massive construction 13

غیر قانونی تعمیرات ،کھدائی کی ٹنوں کے حساب مٹی رات کی تاریکی میں جنگلات میں پھینکی جانے لگی

مری میونسپل کمیٹی کی حدود میں بڑے پیمانے پر غیر قانونی تعمیرات کیلئے کی جانے والی کھدائی کی ٹنوں کے حساب مٹی رات کی تاریکی میں جنگلات میں پھینکی جانے لگی جس پر بڑے پیمانے پر نقصان پہنچنے کااندیشہ ہے جبکہ شدید بارشوں کے دورن خطرناک لینڈسلائیڈنگ کابھی خطرہ موجود ہے،قیمتی خود رو پودے اور دیگر قیمتی درختوں کو بھی نقصان پہنچ رہا ہے تعمیراتی مافیا ء،محکمہ جنگلات،اورمیونسپل کمیٹی کے اہلکاروں کی ملی بھگت سے راتوں رات ہیوی مشینری کے ذریعے بڑے پیمانے پر کھدائی کرکے عمارتیں کھڑی کی جارہی ہیں اوریہاں سے نکلنے والی مٹی ٹرکوں کے ذریعے سڑک کے کناروں سے جنگلات کی حدود میں پھینک دی جاتی ہے جن کو کوئی پوچھنے والے نہیں، جگہ جگہ کھدائی کرکے مٹی اور پتھر نکالنے سے مری کے پہاڑ کمزور ہورہے ہیں جس سے لینڈسلائیڈنگ میں اضافہ ہوتا جارہا ہے بیشترجگہوں پر سڑکیں بھی زمین مین دھنس چکی ہیں عوامی حلقوں نے وزیر اعظم پاکستان،وزیراعلیٰ پنجاب اوردیگر اعلیٰ حکام سے فوری نوٹس لینے کامطالبہ کیاہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں