Islamic Jamiat students 28

اسلامی جمعیت طلبہ مری کا انتظامیہ کو ایک بار پھر الٹی میٹم

“ہمارے تمام تر مطالبات 10تاریخ سے پہلے پورے کیئے جائیں اسلامی جمعیت طلبہ مری کا انتظامیہ کو ایک بار پھر الٹی میٹم”

اسلامی جمعیت طلبہ مری اور ڈگری کالج کے سٹوڈنٹ نے جھیکاگلی بازار میں تاریخی ڈگری کالج کی حثیت جو ختم کر کے کوہسار یونیورسٹی میں ضم کرنے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا تھا جس میں اے سی مری کے ساتھ مزاکرات کے بعد اس شرط پر احتجاج ختم کیا گیا تھا کہ آپکے تمام مطالبات کو مانا جائے گا اسکے بعد اگلے دن اے سی مری نے تمام تر سٹوڈنٹ کے مطالبات بوائز ڈگری کالج جھیکاگلی میں آ کر سنے اور طلبہ اور جمعیت سے دس دن کا ٹائم لیا تھا اور ان دس دنوں کے اندر اے سی مری نے جواب دینا تھا ۔ “اسلامی جمعیت طلبہ مری کا کہنا ہے اگر مطالبات کا جواب نہ آیا یا مطالبات نہ مانے گئے تو آئیندہ کا لائحہ عمل تیار کیا ہوا” ہے۔ مری بھر کے طلبہ کا کہنا ہے کالج کو کسی صورت یونیورسٹی میں ضم نہیں ہونے دینگے “کالج کی حثیت کو ہر صورت برقرار رکھتے ہوئے کالج کی سطح پر بی ایس یا ایسوسی ایٹ ڈگری شروع کروائی جائی اور کالج کے داخلے اوپن کئے جائیں
” کوہسار یونیورسٹی کا قیام خوش آئند عمل ہے اسے وعدے کے مطابق گورنرہائوس مری / پنجاب ہائوس مری اور یونیورسٹی کی اپنی مخصوص جگہ مری بروری کے مقام پر اسے بنایا جائے ہم اس اقدام کو ویلکم کرینگے
اسلامی جمعیت طلبہ مری

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں