Diabetes Foundation 16

ذیابیطس فاؤنڈیشن،،،

مری ذیابیطس / شوگر ایک ایسا موذی مرض ہے جو تیزی سے انسان کے جسمانی اعضاء کو ناقابل تلافی نقصان پہنچاتا ہے،پاکستان دنیا بھرمیں شوگر سے متاثرہ ممالک کی فہرست میں چوتھے نمبر پر آچکا ہے جسکی بنیادی وجہ اس بیماری کے متعلق آگاہی کی کمی اور وسائل کا نہ ہونا ہے ان خیالات کا اظہارعمر ذیابیطس فاؤنڈیشن رجسٹرڈ کے ایگزیکٹو اینڈ میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر عمر وہاب نے جی پی اوچوک مال روڈ مری پراتوار کے دن عمر ذیابیطس فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام ذیابیطس کے مریضوں کیلئے لگائے گئے میڈیکل کیمپ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیاانہوں نے بتایا کہ عمر ذیابیطس فاؤنڈیشن کے چیئرمین سپریم کورٹ کے ریٹائرڈ جسٹس میاں محمد اجمل کی ہدایت پراورہوٹل ایسوسی ایشن مری رجسٹرڈ کے چیئرمین راجہ عرفان عباسی،ہوٹل ایسوسی ایشن مری رجسٹر ڈ کے صدر حافظ جاوید اختر عباسی اورجنرل سیکرٹری راجہ یاسر ریاست عباسی کے تعاون سے میڈیکل کیمپ لگایاگیا ہے ہمارا ادارہ ملک کے چاروں صوبوں کے علاوہ آذادکشمیر اور دیگر علاقوں میں گذشتہ سات سالوں سے ذیابیطس میڈیکل کیمپ لگائے جارہے ہیں جہاں مریضوں کے مفت ٹیسٹ اور علاج کیاجاتا ہے،مفت ادویات فراہم کی جاتی ہے اور لوگوں کو آگاہی بھی دی جاتی ہے کہ اس موذی بیماری سے اور بروقت علاج نہ کئے جانے سے یہ جسم کے اعضاء گردے،دل،آنکھوں اور پاؤں کو ناکارہ بنادیتاہے، میڈیکل کیمپس میں اسپیشلسٹ ڈاکٹرز اور تجربہ کار عملہ خدمت خلق کرتا ہے ان میڈیکل کیمپوں میں پاؤں کا معائنہ،زخموں کاعلاج،آنکھوں کامعائنہ جدی لیبارٹری میں کیاجاتا ہے،مریضوں کو مفت معیار ی ادویات فراہم کی جاتی ہے،الٹرساؤنڈ کی سہولت اور اس موذی مرض کے حوالے آگاہی بھی دی جاتی ہے انہوں نے بتایا کہ اس میڈیکل کیمپ میں 500 سے زائد مردوخواتین مریضوں کے شوگر ٹیسٹ کئے گئے جن میں شوگر،کولیسٹرول،انکی ذیابیطس ہسٹری بھی لی گئی تاکہ بہتر علاج ممکن بنایاجاسکے انہوں نے بتایا کہ میڈیکل کیمپ میں 10 فیصد ایسے نئے مریض بھی آئے جن کے ٹیسٹ کرنے کے بعد معلوم ہوا کہ وہ شوگر کے مریض ہیں میڈیکل کیمپ میں مریضوں کو مفت معیاری ادویات بھی فراہم کی گئی کیمپ کی نگرانی عمر ذیابیطس فاؤنڈیشن کے ایڈمنسٹریٹر انچارج روشن خان نے کی جبکہ دیگر ماہر عملہ بھی دن بھر شوگر کے ٹیسٹ کرتا رہا اور ڈاکٹروں کی ہدایات کے مطابق متاثرہ مریضوں میں مفت ادویات بھی فراہم کرتا رہا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں