Murree administration 13

مری انتظامیہ واٹس ایپ گروپ کی حد تک ہی محدود ہو کر رہ گئ

مری (خمیراہ بانو)مری انتظامیہ واٹس ایپ گروپ کی حد تک ہی محدود ہو کر رہ گئ۔روز کی بنیاد پر ریٹ لسٹ ان کے واٹس گروپ میں تو آ جاتی ہیں لیکن مارکیٹ کو چیک کون کریں گا۔مری کی دوکانوں میں سب نے اپنے اپنے ریٹ لگائے ہوئے ہیں گوشت سبزیاں دالیں فروٹ اور اس سے متعلقہ ضروریاتیں زندگی کی تمام اشیاء کی قیمتیں آ سمان سے باتیں کرنے لگی۔اویزہ ہونے والی ریٹ لسٹ کو واٹس ایپ میں رکھ کے نظر انداز کیاجا رہا ہے مری انتظامیہ لوٹ مار کے بازار کو روکنے میں بری طرح ناکام اسسٹنٹ کمشنر مری زاہد حسین نے سول ڈیفنس کو تو تعینات کیا ہے لیکن وہ بھی اپنا کردار نکس دیکھا رہے ہیں مری کی دوکانوں پر توجہ نہ ہونے کے باعث یہی دوکاندار سیاحوں کو الگ ریٹ پر چیزیں فروخت کر رہے ہیں اور مری کے مقامی لوگوں کو الگ ریٹ پر مری انتظامیہ سب کچھ جان کر بھی تماشا دیکھ رہی ہیں ایسے لگتا ہے جیسے ان کے کہنے پر ہی یہ لوٹ مار کا بازار سجا ہوا ہے غریب عوام کو ہر طرف سے پیسا جا رہا ہے عوام مہنگے داموں خرید داری کرنے پر مجبور مری انتظامیہ کو چاہیے کہ ہر دوکان پر جا کر ریٹ لسٹ کو چیک کیا جائے اور چیز کو اپنے اصلی ریٹ پر فروخت کرنے کی ہدایت کی جائے۔تا کہ غریب عوام مہنگائی کی چکی میں پیسنے سے بچ جائے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں