Roads ruins 18

مری کے اکثریت علاقوں کی سڑکیں کھنڈرات میں تبدیل،،،

مری کہیں دیسی کہیں شیور۔ مری کے اکثریت علاقوں کی سڑکیں کھنڈرات میں تبدیل۔منتخب قیادت کی بے حسی عروج پر لوگوں کا پیدل چلنا بھی دشوار۔کھنڈرات نما سڑکوں پر جانے کے لیئے ٹیکسی ڈرائیور کئی فیصد زائد کرایہ عوام الناس سے طلب کرنے لگے۔منتخب قیادت کے قریب اور اھم تنظیمی عہدوں پر فائز افراد کے گھروں تک شیشہ نما سڑکیں جبکہ عام افراد کے گھروندوں کو جانے والے لنکس روڈ کی حالت زار لکھنے کے قابل بھی نہیں ۔لنکس روڈز کی حالت ایسی کہ لوگوں کی اکثریت اپنے پیارے مریضوں اور بزرگوں کو کندھوں پر اٹھا کر پیدل چلنے پر مجبور ہے جبکہ سوشل میڈیا پر تعمیراتی کاموں کے پرچار پر دیہی علاقوں اور شہر سے ملحقہ بستیوں کے باسی بلدیات میں ووٹ کی طاقت کے ذریعہ سے بدلہ لینے کے لیئے تیار ہیں عوام الناس کے لیئے مری میں معیار کچھ اور اور اھم پارٹی کارکنان کے لیئے نوازشات کی بارشیں ہونے پر عوام الناس کی اکثریت تجوریوں کے محافظوں سے تنگ آچکی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں