19

مری مال روڈ کو فحاشی کا اڈا بن گیا

مری (خمیراہ بانو)ملکہ کوہسار مری میں جیسے ہی لاک ڈاؤن کھولا سیاحوں کے ساتھ ساتھ خواجہ سرا اور بے حیاء لڑکیوں نے بھی مری کا رخ کر لیا اور مری مال روڈ کو فحاشی کا اڈا بنا دیا جگہ جگہ پر کھڑے یہ خواجہ سرا بے حیائی کا لباس پہن کر لوگوں کو اپنی طرف متوجہ کرنے لگے اور سرعام اپنے جسموں کا سودا کر رہے ہیں انتظامیہ سب کچھ دیکھ کر بھی خاموش تماشائی بنی کھڑی رہتی ہے اور ان خواجہ سرا کو دیکھ کر لطف اندوز ہوتی ہے ان خواجہ سرا کی وجہ سے کچھ فیملیاں مال روڈ پر آ نے سے گریز کرتی ہیں کیونکہ ان خواجہ سرا کا گندا لباس عورت کی توہین کا سبب بن رہا ہے جس کو عورتیں دیکھ کر خود شرمندہ ہو جاتی ہیں انتظامیہ اور پولیس نافذ کرنے والے ادارے لگتا ہے ان کی حوصلہ افزائی سے ہی یہ سارا کام ہو رہا ہے مری ایک سیاحتی مقام ہے اور ایک واحد ھل سٹیشن ہے جہاں دنیا بھر سے سیاح مری کا رخ کرتے ہیں اور ا ن سیاحوں کے باعث ہی مری کا کاروبار چلتا ہے لیکن ان خواجہ سرا کی گندی حرکات کی وجہ سے مری کی سیاحت پر برے اثرات منعقد ہو رہے ہیں اور اس کے ساتھ نوجوان نسل کو بربادی کی طرف لے کر جا رہی ہے مری انتظامیہ کو چاہیے کہ ایسے گندگی پھیلانے والے تمام لوگوں کو مری سے فوری طور پر نکالا جائے اور سخت سے سخت ایکشن لیا جائے تا کہ ہماری نوجوان نسل بربادی کی طرف جانے سے بچ سکے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں