9

مری پولیس میرے بیٹے پو غیر انسانی تشددکیا،،،

مری دھا رجاوا مری کے افتیاز کے اندھے قتل کو بعض لوگوں نے سیاسی چپقلش کی بنیاد پر میرے بیٹے کے سر قتل تھوپنے کی مجرمانہ کوشش کی جاری ہے مری پولیس نے 5 روز تک میرے بیٹے جمال کو حبس بیجاہ میں رکھا ار بعیمانہ تشددکا نشانہ بنایا اور عدالتی حکم پر طبی معائنہ کروانے کے بجائے سول ہسپتال مری میں یہ کہہ کرجمال کو لایاجاتا رہا کہ اس کا کورونا بخار وغیرہ چیک کردیں ان خیالات کا اظہار جمال کے والد شاہد عباسی نے اپنے بیان میں کیا انہوں نے مری پولیس میرے بیٹے پو غیر انسانی تشددکیا،حبس بیجاہ میں رکھا جسکی درخواست میں نے سی پی او راولپنڈی کو دے دی ہے،جبکہ جیل بھیجنے کے بعد ایک پولیس اہلکار گاؤں آیا اوراورجمال پرفرضی اور جعلی اسلحہ ڈالنے کی کاروائی کی شاھدعباسی نے انسانی اوربنیادی حقوں کی پامالی پر چیف جسٹس آف پاکستان سے انصاف کی فراہمی کی اپیل کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں