Abida Raja MPA 13

گورنمنٹ گرلز کالج و ہائی سکول مری کو شہر سے باہر منتقل

مری ممبرصوبائی اسمبلی عابدہ راجہ کی کوہسار یونین آف جرنلسٹس کی نشاندہی پر گورنمنٹ گرلز کالج و ہائی سکول مری کو شہر سے باہر منتقل کروانے کےلیئے متحرک پنجاب حکومت اور محکمہ تعلیم کی ارباب اختیارسے باعزت طریقہ سے حصول تعلیم کےلیئے اقدام کروانے کےلیئے اہل مری اور صحافی عرصہ دراز سے آواز بلند کر رہے ہیں۔جس پر رکن صوبائی اسمبلی نے غیرت کے اس درد کو بطور خاتون محسوس کرتے ہوۓ عملی اقدامات اٹھانے کےلیئے متحرک ہوئیں تو سوشل میڈیا پر بھی گورنمنٹ گرلز کالج اور گورنمنٹ گرلز ہائی سکول جو کہ شہر میں ہوٹلز کے دامن میں ہونے کی بنا پر تحصیل بھر کے باعزت گھرانوں کی بچیوں کو مال روڈ کے بے حیائی کے ماحول سے گزرنا پڑتا ہے ان تعلیمی اداروں کی کسی محفوظ اور باپردہ مقام پر منتقلی کےلیئے متحرک ہو کر پوسٹیں اپ لوڈ کرنی شروع کر دی ہیں یاد رہے کہ چند دن قبل خاتون رکن صوبائی اسمبلی پنجاب عابدہ راجہ کی ملاقات مری میں کوہسار یونین آف جرنلسٹس مری کے ممبران سے ہوئی تھی جس میں انکو اس حوالے سے اقدام کرنے کےلیئے کہا گیا تھا جس پر عابدہ راجہ نے یقین دہانی کروائی اور غیرت کے معاملے کو حل کرنے کےلیئے اقدامات شروع کر دیئے مری کے باسیوں کا مطالبہ ہے کہ گرلز کالج کو بوائز کالج یا ٹیویٹا کالج اور گرلز ہائی سکول کو بوائز ہائی سکول کے ساتھ شفٹ کیا جا سکتا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں