مری کے دلکش کوہسار کنکریٹ میں تبدیل میجر جنرل واجد عزیز

ملکہ کوہسارمری کے دلکش کوہسار کنکریٹ میں تبدیل ہورہے ہیں،اگر یہ ہی سلسلہ جاری رہاتو مستقبل میں راولپنڈی اور مری کی آب و ہوا میں کوئی فرق نہیں رہے گا، اسکی خوبصورتی اوقدرتی ماحول کوبحال کرنے کیلئے شجر کاری کا سلسلہ شروع کیا گیاہے جو سال بھر جاری رہے گا،شجر کاری کا مقصد صرف درخت لگانا نہیں بلکہ ان درختوں کی حفاظت بھی بہت ضروری ہے،ملکہ کوہسار مری کو اس لئے خوبصورت کہا جاتا ہے کہ یہاں سرسبز جنگلات اورہرے بھرے پہاڑ ہیں مگر بدقسمتی سے مری کی دیکھ بھال نہ ہونے کے باعث اس کی خوبصورتی ماند پڑ تی جارہی ہے جسے دوبارہ بحال کیا جائے گا،سیلاب کی تباہ کاریوں کی وجہ سے تمام فصلیں تباہ ہو گئیں ہیں جن کی وجہ سے ملک میں اشیاء ضروریہ کی قیمتوں میں ہوش ربا اضافہ ہو گیا ہے افواج پاکستان مشکل کی اس گھڑی میں سیلاب زدگان کی دن رات مددکررہی ہیں اوریہ سلسلہ ان کی مکمل بحالی تک جاری رہیگا،مخیر حضرات سیلاب زدگان کی ان مشکل حالات میں بھرپور حصہ لیکر جزائے خیرحاصل کریں، شجر کاری مہم میں بچوں کا جزبہ دیدنی ہے اور تھیلوسیمیا کی ننھی بچی نے پودا لگا کر یہ پیغام دیا ہے کہ ہر شخص کو اپنے حصہ کا پودا ضرور لگانا چاہے ان خیالات کا اظہار گریژن کمانڈر مری میجر جنرل واجد عزیز نے شوالہ کے مقام پر شجر کاری مہم کی پروقار تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیاانھوں نے کہا کہ ہم نے شجر کاری مہم کو چار مراحل میں مکمل کیا ہے جس میں سول انتظامیہ، سول سوسائٹی،مری میڈیااوراہلیان علاقہ نے بھی بڑھ چڑھ کر اپنا کردار ادا کیا،انہوں نے کہا کہ ہماری اولین ترجیح ہے کہ مری کی خوبصورتی کو بحال رکھا جائے جس کے لئے مزید اقدامات کی اشد ضرورت ہے،انھوں نے کہا کہ اس سے زیادہ اور کیا مشکل حالات ہو سکتے ہیں کہ پورا پاکستان اس وقت مشکل حالات سے دوچار ہے دنیا میں جو ماحولیاتی تبدیلیاں ائیں ہیں بدقسمتی سے ان پانچ ممالک میں ہم بھی شامل ہیں جس کے لئے ہمیں ملک میں بڑے پیمانے پر شجر کاری کی ضرورت ہے اس موقع پر،سٹیشن کمانڈر برگیڈیئر محمد کلیم،کرنل اقبال تاج،کرنل عمران،پرنسپل اے پی ایس مری، وائس چانسلر کوہسار یونیورسٹی حبیب بخاری، محکمہ جنگلات پنجاب عابد گوندندل،اے ڈی سی مری احمد حسن رانجھا،ڈی ایف اومری جنیدممتاز،کینٹ ایگزیکٹو زبیر عارفین، سابق صدر مری بار جلیل اختر عباسی کے علاوہ آرمی افسران،انتظامیہ اور سول سوسائٹی نے بھی بھر پور شرکت کی

جواب دیں