76

وارڈن سہیل صابر نے پبلک سروس ٹرانسپورٹروں کا جینا محال کردیا

کلر سیداں (نمائندہ خصوصی)سٹی ٹریفک پولیس کلر سیداں کے وارڈن سہیل صابر نے پبلک سروس ٹرانسپورٹروں کا جینا محال کردیا اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے وردی کے نشے میں بلاوجہ بھاری جرمانہ کرکے ٹرانسپورٹروں کو چالان تما دیتا ہے اپنی چالان کی ریشو پوری کرنے کے لئے شہر سے باہر جاکر غیر قانونی ویران جگہ ناکے لگا کر پبلک سروس باہر سے آنے والی ٹرانسپورٹ گاڑیوں کے ڈرائیوروں کو باری چلان دے دیئے جاتے ہیں مذکورہ وارڈن ملحقہ علاقے کا رہنے والا ہے شہر کے اندر ڈیوئی کرنے کے بجائے اپنے گھر کے باہر آ کر مین سٹرک نور مارکی شاہ باغ یا چھپر کے قریب اور پولیس چوکی چوک پنڈوری کے باہر بلا وجہ نہ کہ لگاتا ہے جس کو کوئی پوچھنے والا نہیں مذکورہ وارڈن تحصیل و ضلعی انتظامیہ کے افسران کی ملی بھگت سے اپنی ہی تحصیل میں تعینات ہے جبکہ سابق چیف ٹریفک آفیسر راولپنڈی شعیب جانباز نے مذکورہ وارڈن سہیل صابر کو کرپشن کے الزام میں محکمانہ سزا دیتے ہوئے تحصیل کوہ مری ٹرانسفر کرتے ہوئے آرڈر بک میں بغداد طور پر لکھا گیا تھا کہ ایسے وارڈن کو تحصیل کلر سیداں میں تاحکم ثانی تعینات نہ کیا جائے لیکن اس کے باوجود مذکورہ وارڈن تحصیل کلر سیداں میں تعینات ہے ادھر پبلک سروس ٹرانسپورٹرزوں کے درجنوں افراد ساجد خان۔ محمد اسرار محمد ابرار محمد نوید نظیر پیو۔ افضل ۔شمون۔ محمدظریف خٹک اقبال حسین ۔شفیق احمد یاسر محمود ۔محبوب حسین۔ شمریز اختر سمیع خان ۔سرفراز خان بولا۔ طارق محمود ۔راجہ دانیال ۔راجہ اسرار ۔چودھری صدف و دیگر مذکورہ وارڈن سہیل صابر کی من مانیوں اور اختیارات کاکرنے میں استعمال کرنے پر شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ اس مقامی ٹریفک وارڈن نے ہمارا جینا حرام کر رکھا ہے لہذا اس کو تحصیل کلر سیداں سے فوری طور پر کیا جائے انہوں نے آئی جی پنجاب اور ڈی آئی جی ٹریفک لاہور ۔آر پی او راولپنڈی اشفاق احمد ۔سی ٹی او راولپنڈی وسیم ریاض ۔سٹی پولیس آفیسر راولپنڈی عمر سعید ملک سے مطالبہ کیا ہے کہ ایسے ٹریفک وارڈن سے ہمیں نجات دلائی جائ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں