33

سٹی ٹریفک پو لیس کلرسیداں کے دفتری سٹاف نے لیٹ آنا

کلرسیداں (عبدالعزیزپاشا) سٹی ٹریفک پو لیس کلرسیداں کے دفتری سٹاف نے لیٹ آنا اورسرکاری یونیفارم پہنا اپنی تو ہین سمجھتے ہیں چالان وصولی کیلئے آ نے والوں کو شدید مشکلات کا سامنا کر نا پڑتا ہے سائلین کا آر پی او، سی پی اور، سی ٹی او راولپنڈی سے فوری طور پر نوٹس لینے کی اپیل تفصیلات کے مطابقسٹی ٹریفک پولیس آفیسر تحصیل کلر سیداں کے آفس میں تعینات میل فی میل عملے کی من مانیاں عروج پر عرصہ دراز سے تعینات آفس میں لیڈیز نے میں اپنی مرضی سے آتی اور جاتی ہیں ان کو کوئی پوچھنے والا نہیں اسی طرح دفتر میں تعینات DOاورTo نے مرضی کرتے ہوئے بغیر یونیفارم کے اپنے فرائض سر انجام دے رہے ہیں جب جی چاہتا ہے دفتر کو تالا لگا کر اپنے کام کاج کے لیے چلے جاتے ہیں جبکہ چالان کے لیے آنے والے سائلین کو شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے دفتر بند ہونے کی صورت میں کئی کئی گھنٹے سائلین کو کئی کئی گھنٹوں انتظار کرنا پڑتا ہے بالخصوص بروز ہفتہ اور بروز بدھ کو دفتری عملہ آفس کو تالے لگا کر سرکار حق خطیب بادشاہ کے دربار پر چلے جاتے ہیں دفتر کو تالے لگے ہونے کی وجہ سے چالان کے لئے آنے والے ڈرائیور ٹرانسپورٹروں اور نوجوانوں کو سخت مشکلات اور اذیت کا سامنا کرنا پڑتا ہے ادھر ٹرانسپورٹر اور سماجی شخصیات طارق محمود خالد محمود ارشد۔عمران علی خالد محمود۔محمد شفیع۔ شبیر طارق۔ طالب حسین۔ نعمان احمد۔چوہدری وقاص اختر چوہدری شہزاد اکبر۔ودیگر نے اوپی او راولپنڈی سی پی او۔سی ٹی او راولپنڈی سے اس گمبیر صورتحال کا فوری طور پر نوٹس لے کر فرض شناس اور دیندار عملے کو تحت کیا جائے،